Tuesday , January 16 2018
Home / Top Stories / مودی حکومت کا اعلامیہ کرپشن سے مربوط : کجریوال

مودی حکومت کا اعلامیہ کرپشن سے مربوط : کجریوال

نئی دہلی، 22 مئی (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی حکومت پر راست تنقید کرتے ہوئے چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے آج اس پر الزام عائد کیا کہ دراصل وہ دہلی کی حکومت ’’عقبی دروازہ‘‘ سے چلا رہی ہے۔ اس کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کجریوال نے کہا کہ یہ دہلی کے شہریوں کی ’’پیٹھ میں خنجر گھونپنا‘‘ ہے۔ چیف منسٹر دہلی نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر کی ’تائ

نئی دہلی، 22 مئی (سیاست ڈاٹ کام) نریندر مودی حکومت پر راست تنقید کرتے ہوئے چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال نے آج اس پر الزام عائد کیا کہ دراصل وہ دہلی کی حکومت ’’عقبی دروازہ‘‘ سے چلا رہی ہے۔ اس کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کجریوال نے کہا کہ یہ دہلی کے شہریوں کی ’’پیٹھ میں خنجر گھونپنا‘‘ ہے۔ چیف منسٹر دہلی نے کہا کہ لیفٹننٹ گورنر کی ’تائید‘ میں اعلامیہ کی اجرائی یہی اقدام ہے۔ مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے سرکاری گزٹ میں ایک اعلامیہ شائع کروایا گیا ، جس میں کہا گیا ہے کہ لیفٹننٹ گورنر کو چیف منسٹر سے مشاورت کی ضرورت نہیں ہے اور سرکاری عہدیداروں کے تقررات کا مسئلہ ایسا ہی معاملہ ہے۔ کجریوال نے کہا کہ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ بی جے پی کتنی ’خوفزدہ‘ ہے، کیونکہ مرکزی حکومت انسداد بدعنوانی کوششوں کے سلسلے میں ایسا ہی رویہ اختیار کر رہی ہے۔ چیف منسٹر نے لیفٹننٹ گورنر دہلی پر الزام عائد کیا کہ وہ صرف ’چہرہ‘ ہیں اور ان کیلئے احکام دفتر وزیر اعظم سے جاری کئے جاتے ہیں۔ ماقبل آزادی ملکہ انگلستان اعلامیے یہاں کے وائسرائے کیلئے روانہ کیا کرتی تھیں، ’’اب (نجیب) جنگ صاحب وائسرائے ہیں اور وزیر اعظم کا دفتر لندن ہے۔‘‘ کجریوال نے کہا کہ عام آدمی پارٹی حکومت دستوری ماہرین سے رائے طلب کر رہی ہے اور اعلامیہ کے بارے میں ان کی رائے کے مطابق عمل کیا جائے گا۔ دریں اثناء دہلی کے ڈپٹی چیف منسٹر منیش سیسوڈیا نے الزام عائد کیا کہ اس تبدیلی سے ظاہر ہوتا ہے کہ وزیر اعظم مودی اور مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ نے کرپشن کے آگے گھٹنے ٹیک دیئے ہیں۔ تبادلوں اور تقررات کی ’صنعت‘ پھل پھول رہی ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت نے گزشتہ تین ماہ سے اس عمل کو روک دیا تھا۔ قبل ازیں کثیر مقدار میں رقم تبادلوں کیلئے ادا کی جاتی تھی۔

TOPPOPULARRECENT