Monday , December 18 2017
Home / سیاسیات / مودی حکومت کی جی ایس ٹی غیرموزوں اور ایک تماشہ

مودی حکومت کی جی ایس ٹی غیرموزوں اور ایک تماشہ

اسے ایک قوم اور ایک ٹیکس نہیں کہا جاسکتا، چدمبرم کا بیان
نئی دہلی ۔ 6 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سابق وزیرفینانس اور کانگریس کے سینئر لیڈر چدمبرم نے آج کہا کہ مودی حکومت کی گڈس اینڈ سرویس ٹیکس نہایت ہی غیرموزوں اور بکواس ہے۔ یہ تماشہ کے سواء کچھ بھی نہیں ہے کیونکہ اس میں ایک قوم ایک ٹیکس کہلانے والی کوئی چیز ہی نہیں ہے۔ یہاں پر 7 یا سے زائد شرحیں پائی جاتی ہیں۔ کانگریس ٹیکس شرحوں میں کمی کیلئے دباؤ ڈالے گی اور زیادہ سے زیادہ 18 فیصد ٹیکس لگانے کا مطالبہ کرے گی۔ اس کے علاوہ پٹرولیم، الیکٹریسٹی، ریئل اسٹیٹ کو بھی نئے ٹیکس نظام میں لانے کیلئے زور دے گی۔ چدمبرم نے کہا کہ جی ایس ٹی غیرموزوں اور غیرکارکرد ہے۔ یہ وہ جی ایس ٹی نہیں ہے جسے یو پی اے نے تیار کیا تھا۔ یہ حکومت کیا روبہ عمل لانا چاہتی ہے اسے جی ایس ٹی نہیں کہا جاسکتا بلکہ یہ 7 شرحوں پر مشتمل ٹیکس ہے۔ جی ایس ٹی کے اندر کئی خامیاں پائی جاتی ہیں۔ جب اس ٹیکس میں 0.25، 3 ، 5، 12، 18، 28 اور 40 مختلف شرحیں نافذ کی جارہی ہے تو یہ جی ایس ٹی کس طرح ہوا۔ ریاستی حکومت کے ساتھ بے سمت کی دوڑ چل رہی ہے تو ایسے میں ہم اس ٹیکس کو ایک قوم اور ایک ٹیکس کا نظام نہیں کہہ سکتے۔

TOPPOPULARRECENT