Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / مودی حکومت کے وعدے کھوکھلے اور نعرے محض ڈرامہ بازی

مودی حکومت کے وعدے کھوکھلے اور نعرے محض ڈرامہ بازی

منموہن سنگھ حکومت میں ملک کی معیشت نے ترقی کی ۔ سونیا گاندھی کا پلینری سشن سے خطاب
نئی دہلی 17 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق صدر کانگریس سونیا گاندھی نے آج وزیر اعظم نریندر مودی پر سخت تنقید کی ہے اور کہا کہ انتخابات سے قبل انہوں نے کرپشن سے مقابلہ اور سب کیلئے اجتماعی ترقی کو یقینی بنانے کے جو وعدے کئے تھے وہ سب کچھ ڈرامہ بازی اور اقتدار حاصل کرنے کیلئے شعبدہ بازی تھی ۔ سونیا گاندھی نے کانگریس کے 84 ویں پلینری سشن سے خطاب کرتے ہوئے پارٹی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ پارٹی کو مستحکم کرنے اور ملک کو امتیازی سیاست ‘ انتقامی سیاست اور ہٹ دھرمی سے پاک کرنے کیلئے کسی بھی قربانی کیلئے تیار ہوجائیں۔ انہوں نے کارکنوں پر زور دیا کہ وہ موجودہ حکومت سے درپیش ہونے والے چیلنجس سے شدت کے ساتھ مقابلہ کریں اور ان پر زور دیا کہ وہ ملک کو اقتدار کے خوف سے آزاد کروانے جدوجہد کریں۔ سونیا گاندھی نے کہا کہ ’’ سب کا ساتھ ۔ سب کا وکاس ‘‘ اور ’’ نہ کھاؤنگا ۔ نہ کھانے دونگا ‘‘ کے نعرے صرف اور صرف ڈرامہ بازی ہے اور یہ اقتدار حاصل کرنے کی شعبدہ بازی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی مودی حکومت کے خلاف جدوجہد کر رہی ہے اور ملک کے عوام یہ سمجھنے لگے ہیں کہ بی جے پی نے 2014 میں جو وعدے کئے تھے وہ سب کھوکھلے تھے ۔ سونیا گاندھی نے کہا کہ سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ کی قیادت میں ملک کی معیشت نے کافی ترقی کی تھی ۔ یو پی اے حکومت نے ایسی پالیسیاں بنائی تھیں جن کے ذریعہ لاکھوں افراد غربت سے اوپر اٹھے تھے اور آج مودی حکومت ان پالیسیوں کو کمزور کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اقتدار کے ہر پہلو کا استعمال کر رہی ہے لیکن کانگریس ہٹ دھرمی اور انا کی سیاست کے آگے جھکے گی نہیں ۔ اس حکومت نے اپنے مخالفین کے خلاف انتقام کی سیاست شروع کردی ہے ۔ کانگریس پارلیمانی پارٹی سربراہ نے کہا کہ ان کی پارٹی مودی حکومت کی دھاندلیوں کو ثبوت کے ساتھ آشکار کر رہی ہے ۔ انہوںن ے کہا کہ پارٹی یہ کوشش کر رہی ہے کہ عوام کا اعتماد دوبارہ جیت سکے اور وہ بی جے پی کو اقتدار سے بیدخل کرنے ہم خیال جماعتوں سے مل کر کام کریگی ۔ انہوںنے کہا کہ جو لوگ کانگریس پارٹی کی شناخت ہی کو ملک سے باہر کردینا چاہتے ہیں وہ نہیں جانتے کہ عوام اسے کتنا پسند کرتے ہیں۔ آج یہی ایک اولین ترجیح ہے کہ کس طرح سے کانگریس کو مستحکم کیا جاسکے ۔ کانگریس صرف ایک سیاسی جماعت نہیں بلکہ مستقبل کا ایک نظریہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT