Monday , June 25 2018
Home / Top Stories / مودی حکومت کے پہلے بجٹ میں ’اچھے دن ‘کے خواب اور ’چند کڑوی گولیاں‘

مودی حکومت کے پہلے بجٹ میں ’اچھے دن ‘کے خواب اور ’چند کڑوی گولیاں‘

٭ کولڈڈرنگس ، پان مسالہ ، سگریٹ، گٹکھا ، تمباکو ، ریڈیو ٹیکسی ، امپورٹیڈ الیکٹرانک اشیاء مہنگے ٭ لیاپ ٹاپ، صابن ، واٹر پیوریفائرس ، ایل ای ڈی ، کمپیوٹرس ، برانڈیڈ پٹرول ،اسمارٹ کارڈ ، موبائل فونس سستے ٭ انکم ٹیکس سے استثنیٰ کی حد بڑھاکر 2.5 لاکھ روپئے کردی گئی

٭ کولڈڈرنگس ، پان مسالہ ، سگریٹ، گٹکھا ، تمباکو ، ریڈیو ٹیکسی ،
امپورٹیڈ الیکٹرانک اشیاء مہنگے
٭ لیاپ ٹاپ، صابن ، واٹر پیوریفائرس ، ایل ای ڈی ، کمپیوٹرس ،
برانڈیڈ پٹرول ،اسمارٹ کارڈ ، موبائل فونس سستے
٭ انکم ٹیکس سے استثنیٰ کی حد بڑھاکر 2.5 لاکھ روپئے کردی گئی
٭ سینئر سٹیزنس کیلئے انکم ٹیکس کی حد 2.5 لاکھ سے بڑھاکر 3 لاکھ مقرر
نئی دہلی۔ 10 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) مودی حکومت نے آج پہلا عام بجٹ برائے سال 2014-15ء پیش کیا جس میں ’’اچھے دن‘‘ سے متعلق کئے گئے بلند بانگ وعدوں کی کوئی جھلک دکھائی نہیں دی۔ اس کے برعکس عوام کو ’’کڑوی گولیاں‘‘ دی گئیں جس کا سلسلہ حکومت نے اقتدار سنبھالتے ہی شروع کیا تھا۔ وزیر فینانس ارون جیٹلی کی جانب سے آج پارلیمنٹ میں پیش کردہ بجٹ میں صرف تنخواہ یاب طبقے کیلئے شخصی انکم ٹیکس کی استثنائی حد کو 2 لاکھ سے بڑھاکر 2.5 لاکھ روپئے کیا گیا، اس کے نتیجہ میں انہیں سالانہ 36,000 سے 40,000 روپئے تک کی بچت ہوسکتی ہے۔ اس کے علاوہ حکومت نے سرویس ٹیکس کو کافی وسعت دے دی اور 7,525 کروڑ روپئے زائد وصولی کا نشانہ مقرر کیا ہے۔

کولڈ ڈرنگس پر 5% اضافی اکسائز ٹیکس عائد کیا گیا ہے ۔ تمباکو پراڈکٹس بھی مہنگے ہوجائیں گے کیونکہ اکسائز ڈیوٹی کو بڑھاکر 72% کردیا گیا ہے۔ مکان کیلئے قرضہ جات منہائی کی حد کو 1.5 لاکھ سے بڑھاکر 2 لاکھ روپئے کیا گیا ہے۔ حکومت سرمایہ کاری کی حد میں بھی اضافہ کا منصوبہ رکھتی ہے اور اسے ایک لاکھ سے بڑھاکر 1.5 لاکھ کیا جائے گا۔ سینئر سٹیزنس کو سالانہ 3 لاکھ روپئے تک انکم ٹیکس سے استثنٰی رہے گا۔ بجٹ میں جوتوں پر اکسائز ڈیوٹی کو 12% سے کم کرکے 6% کیا گیا ہے جس کے نتیجہ میں یہ سستے ہوجائیں گے۔ اسی طرح پیاکیجڈفوڈس ، صابن اور نگینے و ہیروں کی قیمت میں بھی کمی ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT