Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / مودی کا زوال بھی عروج کی طرح تیز رفتار

مودی کا زوال بھی عروج کی طرح تیز رفتار

تلنگانہ میں بھی تمام طبقات ٹی آر ایس حکومت سے نالاں ‘آر سی کنٹیا کا انٹرویو

محمد نعیم وجاہت
حیدرآباد 9 اپریل : سکریٹری انچارج تلنگانہ کانگریس اُمور آر سی کنٹیا نے کہا کہ ملک میں نوجوان وزیراعظم نریندر مودی سے مایوس ہے ‘ تلنگانہ میں سماج کے تمام طبقات ٹی آر ایس حکومت سے ناراض ہے ۔ راہول گاندھی امید کی کرن بن کر ابھرے ہیں ۔ ریاست میں جب بھی انتخابات ہونگے کانگریس بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کریگی ۔ بس یاترا کی کامیابی سے چیف منسٹر تلنگانہ بوکھلاہٹ کا شکار ہے ۔ حکومت کی ناکامیوں سے عوام کی توجہ ہٹانے عجلت میں تھرڈ فرنٹ کا اعلان کیا جس کی کسی جماعت نے تائید و حمایت نہیں کی ۔ آج روزنامہ ’’سیاست‘‘ کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے آر سی کنٹیا نے کہا کہ نریندر مودی جتنی تیزی سے ابھرے تھے اتنی ہی تیزی سے زوال پذیر ہورہے ہیں ۔ 2014ء عام انتخابات میں انہوں نے عوام کو ہتھیلی میں جنت دکھائی تھی ‘ بیرونی ممالک میں موجود کالا دھن واپس لاکر ہر شہری کے بینک اکاؤنٹ میں 15لاکھ روپئے جمع کرنے اور بیروزگار نوجوانوں کو ہر سال 2کروڑ ملازمتیں فراہم کرنے اور کرپشن کا خاتمہ کرنے کا وعدہ کیا تھا ‘ چار سال گذرنے کے باوجود شہریوں کے اکاؤنٹ میں 15لاکھ روپئے جمع نہیں ہوئے ‘ بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے اس کو انتخابی جملہ قرار دیتے ہوئے ٹال دیا ۔ دو کروڑ ملازمتوں کے بارے میں جب دریافت کیا گیا تو وزیراعظم نریندر مودی نے پکوڑے تلنے کو بھی ملازمت قرار دیا ‘ کانگریس کے زیر قیادت یو پی اے حکومت میں بدعنوانیوں کے الزامات عائد کئے گئے ‘ بی جے پی کی زیر قیادت این ڈی اے حکومت میں بزنسمین بینکوں کو لوٹتے ہوئے بیرونی ممالک فرار ہوگئے ۔ بی جے پی کا ریموٹ کنٹرول آر ایس ایس کے پاس ہے ۔ 20سال قبل بی جے پی کے قائدین آر ایس ایس سے اپنے رشتوں کی تردید کیا کرتے تھے ‘ آج آر ایس ایس سے تعلقات پر فخر کا اظہار کر رہے ہیں ۔ مودی کے چار سالہ دور حکومت میں گورنر جیسے دستوری عہدوں کے بشمول تمام سرکاری اور فیصلہ ساز اداروں کے اعلیٰ عہدوں پر آر ایس ایس ذہنیت کے حامل افراد کو تعینات کردیا گیا ہے ۔ ( باقی سلسلہ صفحہ 10 پر )

TOPPOPULARRECENT