Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / مودی کا ’ نہ خود کھاؤں گا نہ کسی کو کھانے دونگا ‘ کا دعویٰ کھوکھلا ثابت ہوا

مودی کا ’ نہ خود کھاؤں گا نہ کسی کو کھانے دونگا ‘ کا دعویٰ کھوکھلا ثابت ہوا

امیت شاہ کے فرزند کی مالیاتی بے قاعدگیوں کی عدالتی تحقیقات کا مطالبہ ۔ کانگریس کا احتجاجی دھرنا ‘ اتم کمار ریڈی کا خطاب
حیدرآباد۔ 10 اکتوبر (سیاست نیوز) کانگریس کی جانب سے بی جے پی کے صدر امیت شاہ کے فرزند کی مالیاتی بے قاعدگیوں کے خلاف مجسمہ امبیڈکر ٹینک بنڈ پر احتجاجی دھرنا منظم کیا۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی اُتم کمار ریڈی کے بشمول کانگریس کے دیگر قائدین کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ سابق وزیر ڈی ناگیندر کی قیادت میں اس دھرنے کا اہتمام کیا گیا۔ اُتم کمار ریڈی نے ان مالیاتی بے قاعدگیوں کی عدالتی تحقیقات کراتے ہوئے امیت شاہ کے فرزند کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے اقتدار میں آنے سے قبل نقصانات میں چلنے والی امیت شاہ کے فرزند جئے شاہ کی کمپنی ٹمپل انٹرپرائزس‘ نریندر مودی کے وزیراعظم بننے کے بعد سینکڑوں کروڑ روپئے کے فائدے میں پہنچ گئی ہے‘ یہ کیسے ممکن ہوسکتا ہے۔ وزیراعظم خود اس کی وضاحت کریں۔ وزیراعظم کا یہ دعویٰ کہ نہ خود کھاتا ہوں نہ کسی کو کھانے دیتا ہوں‘‘۔ مضحکہ خیز ثابت ہوا ہے۔ 2004ء میں جئے امیت شاہ، جیتندر شاہ، امی شاہ کی شریک حیات سونل شاہ ٹیمپل کمپنی کے ڈائریکٹرس کی حیثیت سے کمپنی کا قیام عمل میں آیا تھا۔ 2013ء تک صرف 50,000 روپئے آمدنی والی کمپنی کو ایک سال میں 80 کروڑ روپئے کی آمدنی کیسے ہوئی، اس کی نریندر مودی اور امیت شاہ وضاحت کریں۔ بدعنوانیوں کے معاملے دیگر جماعتوں کے قائدین کو تنقید کا نشانہ بنانے والے بی جے پی قائدین نے ان کے خلاف سی بی آئی اور آئی ڈی کا بھی بے جا استعمال کیا۔ تمام ثبوتوں کے ساتھ بدعنوانیوں کا انکشاف ہونے کے باوجود اس پر سب خاموش ہیں۔ ستم ظریفی یہ ہے کہ سب امیت شاہ اور ان کے ارکان خاندان کی حمایت میں اُتر آئے ہیں ۔

کیا یہی این ڈی اے کی بدعنوانی کے خلاف جنگ ہے۔ ملک میں کسانوں کو ان کی پیدا کردہ کاشت پر اصل قیمت وصول نہ ہونے سے سالانہ 12,000 کسان خودکشی کررہے ہیں۔ کسان جو سرمایہ کاری کررہے ہیں انہیں وہ بھی وصول نہیں ہورہی ہے۔ امیت شاہ کا خاندان زراعت کرکے کیسے 80 کروڑ روپئے کا منافع حاصل کرسکتا ہے۔ کسانوں کو قرض دینے سے انکار کرنے والے امدادی بینک کروڑہا روپئے کا قرض امیت شاہ کے ارکان خاندان کو کیسے دیا ہے۔ اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ مرکزی حکومت کو کسانوں سے کتنی ہمدردی ہے۔ کالادھن واپس لانے کا بلند بانگ وعدہ کیا گیا مگر تین سال ہونے کے باوجود ایک روپیہ تک نہیں لایا گیا۔ نوٹ بندی ناکام ہوگئی۔ اُتم کمار ریڈی نے نوٹ بندی سے قبل کمپنی بند کرتے وقت نوٹ تبدیل کرالینے کا الزام عائد کیا۔ وزیراعظم مودی بدعنوانیوں کے خلاف سنجیدہ ہیں تو سپریم کورٹ جج کے ذریعہ اس کی تحقیقات کروائیں ۔ مودی کی خاموشی سے بدعنوانیوں کی حوصلہ افزائی ہورہی ہے۔ دھرنے میں سابق صدر پردیش کانگریس کمیٹی پی لکشمیا، سابق وزراء سریدھر بابو، ایم ششی دھر ریڈی، سابق رکن پارلیمنٹ انجن کمار یادو، صدر تلنگانہ یوتھ کانگریس انیل کمار یادو کے علاوہ کانگریس کے دیگر قائدین نے شرکت کی۔ احتجاج کے دوران کانگریس قائدین نے ’مودی ہٹاؤ،دیش بچاؤ‘ کے نعرے لگائے۔ پولیس نے کانگریس کے احتجاجی قائدین کو گرفتار کرکے گاندھی نگر اور رام گوپال پیٹ پولیس اسٹیشن منتقل کیا۔ بعدازاں انہیں رہا کردیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT