Monday , January 22 2018
Home / سیاسیات / مودی کو بے نقاب کرنے کی میڈیا میں ہمت نہیں

مودی کو بے نقاب کرنے کی میڈیا میں ہمت نہیں

بنگلور 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) میڈیا پر اپنی تنقیدوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے اور صحافیوں کی نکتہ چینی کی پرواہ کئے بغیر عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال نے آج میڈیا کے خلاف پھر ایک بار تلخ اظہار خیال کیا اور اِس سے سوال کیاکہ آیا میڈیا چیف منسٹر گجرات نریندر مودی سے متعلق حقیقی کہانی کو عوام کے سامنے پیش کرنے کی جرأت کرسکتا ہے؟

بنگلور 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) میڈیا پر اپنی تنقیدوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے اور صحافیوں کی نکتہ چینی کی پرواہ کئے بغیر عام آدمی پارٹی لیڈر اروند کجریوال نے آج میڈیا کے خلاف پھر ایک بار تلخ اظہار خیال کیا اور اِس سے سوال کیاکہ آیا میڈیا چیف منسٹر گجرات نریندر مودی سے متعلق حقیقی کہانی کو عوام کے سامنے پیش کرنے کی جرأت کرسکتا ہے؟ بنگلور میں اپنا روڈ شو شروع کرنے سے قبل اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے اُنھوں نے الزام عائد کیاکہ میڈیا نے عوام کے سامنے چیف منسٹر گجرات کے تعلق سے ’’سچائی‘‘ پیش نہیں کی ہے۔ کیا میڈیا میں ہمت ہے کہ وہ گجرات کی حقیقی تصویر ملک کے عوام میں پیش کرے۔

یہ میڈیا پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔ کجریوال نے میڈیا اور سیاسی پارٹیوں کے درمیان مماثلت قرار دیتے ہوئے کل شدید تنقید کی تھی۔ اِس کے بعد صحافتی برادری نے اِن کے خلاف برہمی ظاہر کی تھی۔ اروند کجریوال نے اپنے اِس ریمارک کے ذریعہ تنازعہ پیدا کردیا تھا کہ سارا میڈیا بکاؤ ہے۔ اگر عام آدمی پارٹی اقتدار پر آجائے گی تو اِس مسئلہ کی بھی تحقیقات کرنے کے بعد میڈیا کے لوگوں کو جیل میں ڈال دیا جائے گا۔ اپنے دو گھنٹے کے دورے کے دوران اروند کجریوال نے عام آدمی پارٹی کے لئے فنڈس اکٹھا کرنے کی خاطر ترتیب دیئے گئے 20 ہزار افراد کے ڈنر میں بھی شرکت کی۔ وہ کل چکبالا پور میں روڈ شو منعقد کریں گے۔ اِس کے بعد بنگلور میں اِن کی ریالی اور دورے کا اختتام عمل میں آئے گا۔

بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار پر اپنے جلسوں کے دوران عوام کو ’’دھوکہ‘‘ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے اروند کجریوال نے کہاکہ اِسی لئے عوام یہ کہہ رہے ہیں اب تک میڈیا نے عوام کے سامنے مودی کے تعلق سے سچ کو پیش نہیں کیا ہے۔ یہ پوچھے جانے پر کہ مودی کے تعلق سے اپنے الزامات کو ثابت کرنے کے لئے اِن کے پاس کیا ٹھوس شواہد موجود ہیں، اُنھوں نے کہاکہ گجرات میں کسانوں کی حالت زار اِس بات کا ثبوت ہے کہ اُنھیں اِن کی ہی سرزمین پر فاقہ کشی سے دوچار کیا گیا ہے۔ اِن کی زمینیں چھین لی گئی ہیں، اِنھیں روزگار سے محروم کیا گیا ہے۔ جبکہ نریندر مودی کے تعلق سے یہ پروپگنڈہ کیا جارہا ہے کہ وہ کسانوں کے مسیحا ہیں۔ اصل میں اُنھوں نے کسانوں کی زمین چھین کر اُنھیں بے زمین کردیا۔ مودی مسیحا نہیں بلکہ ملک کے کسانوں کے لئے خطرہ بن رہے ہیں۔ عوام کو اِس حقیقت سے واقف ہونا چاہئے۔
اگر کسان مودی کی سچائی سے واقف ہوجائیں تو مودی کو اِن میں سے کوئی بھی ووٹ نہیں دے گا۔ میں خود کو نمایاں نہیں کررہا ہوں، بلکہ میں نے گجرات میں اپنی آنکھوں سے وہاں کے کسانوں کی حالت زار دیکھی ہے۔ اِس لئے میں میڈیا سے کہہ رہا ہوں کہ وہ سچائی پیش کریں۔ کجریوال نے کہاکہ میڈیا کو گجرات کے اندر پائی جانے والی حقیقی حالت بتانی چاہئے۔ اُنھیں رشوت ستانی اور بدعنوان حکمرانی کی حقیقی تصویر ظاہر کرنی چاہئے۔ دہلی اسمبلی انتخابات سے قبل گجرات کے اندر کیا ہوا، وہ میڈیا کو معلوم ہے۔ ہمارے خلاف میڈیا نے اسٹنگ آپریشن کیا تھا، کیا ہم نے اِن کے خلاف کچھ کہا، نہیں۔ اب مودی جی بڑے بڑے جھوٹ بول رہے ہیں اور پوری قوم کو گمراہ کررہے ہیں جو سب سے بڑی سازش ہے۔ اُن سے استفسار کیا گیا کہ وہ اُن چیانلوں کا نام بتائیں جنھوں نے مودی کے کوریج کے لئے مبینہ طور پر پیسے لئے تھے؟ کجریوال نے اِس کا جواب دینے سے انکار کردیا۔

TOPPOPULARRECENT