Sunday , January 21 2018
Home / Top Stories / مودی کو ’جادوگر‘ اور تمام مشکلات کا حل بناکر پیش کیا جارہا ہے

مودی کو ’جادوگر‘ اور تمام مشکلات کا حل بناکر پیش کیا جارہا ہے

کولار (کرناٹک) 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے صدر کانگریس سونیا گاندھی نے آج الزام عائد کیاکہ اُنھیں نقاب کے پیچھے چھپے ہوئے ’’حقیقی چہرے‘‘ کو پیش کیا جارہا ہے اور اُنھیں ’’جادوگر‘‘ ظاہر کیا جارہا ہے جو ملک کی تمام بُرائیوں کو دور کرسکتا ہو۔ مودی کا نام لئے بغی

کولار (کرناٹک) 9 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے وزارت عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے صدر کانگریس سونیا گاندھی نے آج الزام عائد کیاکہ اُنھیں نقاب کے پیچھے چھپے ہوئے ’’حقیقی چہرے‘‘ کو پیش کیا جارہا ہے اور اُنھیں ’’جادوگر‘‘ ظاہر کیا جارہا ہے جو ملک کی تمام بُرائیوں کو دور کرسکتا ہو۔ مودی کا نام لئے بغیر سونیا گاندھی نے گجرات کی ترقی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جو نریندر مودی پیش کررہے ہیں۔ اُنھوں نے بعض لوگوں کو چھوٹی چھوٹی باتیں بڑے کارناموں کے طور پر پیش کرنے کی عادت ہوتی ہے۔ چاہے دیگر ریاستوں میں کوئی اچھا کام ہوا ہو یا نہ ہوا ہو۔ اُنھوں نے کہاکہ آج کل پورے ملک میں زبردست اور مہنگی تشہیر ہوتی دیکھ سکتے ہیں۔ یہ سچائی کو پوشیدہ کرنے کی کوشش ہے۔ صدرنشین یو پی اے کولار میں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب کررہی تھیں۔ اُنھوں نے کہاکہ ایک شخص کے چہرے کی حقیقت کو نقاب کے پیچھے چھپانے کی کوشش ہورہی ہے۔ اُنھیں تمام بُرائیوں کا حل اور ملک کے لئے جادوگر بناکر پیش کیا جارہا ہے۔ گجرات کے مثالی نمونے کی حقیقت کا پردہ فاش کرتے ہوئے اُنھوں نے کہاکہ بعض لوگوں کو چھوٹی چھوٹی باتیں بڑے کارناموں کے طور پر پیش کرنے کی عادت ہوتی ہے۔ آج کل اِسی قسم کی تصویر گجرات کی ترقی کی صورت میں عوام کو دکھائی جارہی ہے۔

حالانکہ دیگر ریاستوں میں کوئی اچھا کام انجام نہیں دیا گیا۔ سونیا گاندھی نے کہاکہ یہ ایک ’’یکسر مختلف بات‘‘ ہے کہ غریب، محروم طبقات اور اقلیتوں نے اِس ترقی کے لئے کافی قربانیاں دی ہیں۔ غریب آدمی کے مکان میں ناقص تغذیہ سے بچے موت کا شکار ہورہے ہیں۔ قبائیلیوں کو اپنی روز مرہ زندگی گذارنے کے لئے مشکلات کا سامنا ہے۔ کاشتکاروں کی اراضیات گجرات میں زبردستی حاصل کی جارہی ہیں۔ گجرات کی خواتین کی صورتحال یہ ہے کہ اُنھیں مختلف قسم کی ہراسانی کا شکار بنایا جارہا ہے۔ یہ حقیقی تصویر ہے۔ یہ لوگ اتحاد نہیں انتشار اور دلوں کی تقسیم میں یقین رکھتے ہیں۔ وہ بھائیوں کو ایک دوسرے سے لڑاتے ہیں۔ میں آپ سے کہنا چاہتی ہوں کہ آپ ایسے لوگوں سے تعمیر قوم کی توقع رکھتے ہیں جو سیکولر اُصولوں کی مبادیات میں بھی یقین نہیں رکھتے۔ سونیا گاندھی نے کہاکہ ہم ایسے لوگوں سے تعمیر قوم کی توقع نہیں رکھ سکتے۔ مرکزی وزیر کے ایچ منیپا کولار انتخابی حلقہ سے امیدوار ہیں۔ وہ بھی سونیا گاندھی کے ساتھ تھے۔ صدر کانگریس نے کہاکہ ہمارے سامنے دو متبادل موجود ہیں۔ ایک طرف بی جے پی اور اُس کا تقسیم کرنے والا فرقہ پرست ایجنڈہ ہے،

دوسری طرف کانگریس ہے جو ہمیشہ اُخوت اور اتحاد کی علمبردار رہی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ یہی بی جے پی ہے جو دھرم اور اخلاق کی بات کرتی ہے لیکن آپ اِس حقیقت کا مشاہدہ کرچکے ہیں کہ اِن کے دور اقتدار میں عورتوں سے کیسا سلوک کیا گیا جو پوری قوم کے لئے پریشانی کی وجہ بن گیا تھا۔ اُنھوں نے کہاکہ کرناٹک میں بی جے پی کی سابق حکومت کے دور میں ہر قسم کی ترقیاتی سرگرمی جمود کا شکار ہوگئی تھی۔ یہ ایک سازش تھی۔ گٹھ جوڑ کے ذریعہ ریاست کی معدنی دولت لوٹی گئی۔ اُنھوں نے سدرامیا زیرقیادت حکومت کے شروع کئے ہوئے ترقیاتی کاموں پر اظہار مسرت کرتے ہوئے کہاکہ ترقی کا موسم کرناٹک میں واپس آگیا ہے۔ اُنھوں نے یہ بھی کہاکہ مرکز میں یو پی اے کے گزشتہ 10 سالہ دور اقتدار میں کئی ترقیاتی کام انجام دیئے گئے۔ کئی فیصلے عوام کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لئے کئے گئے۔ سماج کے تمام طبقات کے افراد کی زندگی بہتر بنائی گئی۔

TOPPOPULARRECENT