Friday , September 21 2018
Home / سیاسیات / مودی کی مسلمانوں کی ستائش کو شیوسینا کی تائید

مودی کی مسلمانوں کی ستائش کو شیوسینا کی تائید

ممبئی۔ 22 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے ساتھ اتحاد ایسا معلوم ہوتا ہے کہ ٹوٹنے کے قریب ہے، تاہم شیوسینا نے آج وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے ہندوستانی مسلمانوں کی ستائش کی تائید کی اور کہا کہ انہوں نے مادرِ وطن سے اس طبقہ کی محبت کی طمانیت دیتے ہوئے ایک نیا باب کھولا ہے۔ نریندر مودی نے ہندوستانی مسلمانوں کی تعریف کرتے ہوئے ان کی ح

ممبئی۔ 22 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے ساتھ اتحاد ایسا معلوم ہوتا ہے کہ ٹوٹنے کے قریب ہے، تاہم شیوسینا نے آج وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے ہندوستانی مسلمانوں کی ستائش کی تائید کی اور کہا کہ انہوں نے مادرِ وطن سے اس طبقہ کی محبت کی طمانیت دیتے ہوئے ایک نیا باب کھولا ہے۔ نریندر مودی نے ہندوستانی مسلمانوں کی تعریف کرتے ہوئے ان کی حب الوطنی کو شک و شبہ سے بالاتر قرار دیا تھا۔ شیوسینا کے ترجمان ’’سامنا ‘‘ کے ایک اداریہ میں پارٹی نے جو بی جے پی کی گزشتہ 25 سال سے حلیف ہے، کہا کہ ہندوستانی مسلمانوں کی حب الوطنی کی نریندر مودی کی جانب سے ستائش کو ہندوتوا سے ان کی وابستگی کا کمزور پڑ جانا نہیں سمجھا جانا چاہئے۔ مودی کے ذہن میں ہندوتوا کا یقین کمزور نہیں ہوا ہے۔مسلمانوں کی حب الوطنی بے شک قابل ستائش ہے۔اداریہ میں انہوں نے مسلمانوں سے خواہش کی کہ مودی کو بعد میں بھی شکست سے دوچار نہ کریں کیونکہ وہ تمام طبقات کی نمائندگی کرتے ہیں اور خاص طور پر ان کی دیانت داری پر شک کرنے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔ ان کو صرف نقلی سیکولرازم کے علمبردار ’’مسلم دشمن ‘‘ظاہرکرتے رہے ہیں۔ ایک ٹی وی چیانل پر انٹرویو دیتے ہوئے مودی نے کہا تھا کہ ہندوستانی مسلم ہندوستان کیلئے جئیں گے اور اسی کیلئے مریں گے۔ وہ دہشت گرد تنظیموں جیسے القاعدہ کی دھن پر رقص نہیں کریں گے۔ مودی کے مسلمانوں کے بارے میں تبصرہ کی شیوسینا کی جانب سے منظوری کو وزیراعظم کے ساتھ خوشگوار تعلقات برقرار رکھنے کی کوشش سمجھا جاسکتا ہے جبکہ نشستوں کی تقسیم کے سلسلے میں بی جے پی سے تنازعہ پیدا ہوچکا ہے۔

TOPPOPULARRECENT