Wednesday , December 13 2017
Home / ہندوستان / مودی کے جنم پتری ریمارکس پر احمد پٹیل کی تنقید

مودی کے جنم پتری ریمارکس پر احمد پٹیل کی تنقید

وڈوڈرا 13 فروری (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس قائدین کی آواز میں آواز ملاتے ہوئے احمد پٹیل نے بھی وزیراعظم نریندر مودی کے جنم پتری ریمارکس پر شدید تنقید میں کہاکہ اُن کی پارٹی اِس طرح کے خطرات سے خائف نہیں ہے۔ گزشتہ روز یہاں سے تقریباً 90 کیلو میٹر انکلیشور ٹاؤن میں منعقدہ جن ویدنا سمیلن سے خطاب اور پھر پریس کانفرنس میں احمد پٹیل نے کہاکہ پارٹی کو ایسی تکبرانہ باتوں سے کوئی خوف نہیں ہے۔ اُنھوں نے دعویٰ کیاکہ اترپردیش، اتراکھنڈ، منی پور، گوا اور پنجاب پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کا نتیجہ ظاہر کردے گا کہ بی جے پی کے دن گنے جنے رہ گئے ہیں۔ اپنے پیشرو منموہن سنگھ پر پارلیمنٹ میں ’برساتی‘ والے طنز پر اپوزیشن کی طرف سے مسلسل تنقیدوں کے شکار مودی نے حال ہی میں ہردوار کی انتخابی ریالی میں کانگریس سے کہا تھا کہ اپنی زبان قابو میں رکھے اور شائستہ زبان کا مظاہرہ کرے۔ ’’میں کانگریس قائدین سے کہتا ہوں کہ اپنی زبان پر قابو رکھیں ورنہ میرے پاس اُن کی ساری جنم پتری ہے۔ میں زبان اور طرز عمل کی شائستگی ترک کرنا نہیں چاہتا لیکن اگر آپ بکواس کرتے رہیں تو آپ کا ماضی آپ کا پیچھا کرے گا، آپ کی غلط کاریاں اور آپ کے گناہ آپ کا تعاقب کریں گے‘‘۔ احمد پٹیل نے 8 نومبر 2016 ء کو ’’سیاہ دن‘‘ قرار دیتے ہوئے کہاکہ نوٹ بندی سے معاشی نراج کی عکاسی ہوتی ہے جو سارے ملک پر مسلط کردی گئی جس کی وجہ سے کاروبار بند ہوگئے، بڑے پیمانہ پر نوکریوں کا نقصان ہوا اور عام آدمی کو بے پناہ پریشانیوں سے گزرنا پڑاہے۔

TOPPOPULARRECENT