مودی کے حاسدین ان کی راہ میں رکاوٹ: رام دیو

نئی دہلی۔/21مارچ، ( سیاست ڈاٹ کام ) یوگا گرو بابا رام دیو نے آج بی جے پی کے وزارتِ عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کی زبردست ستائش کرتے ہوئے کہا کہ مودی ہی وہ واحد لیڈر ہیں جو ملک میں مستحکم حکومت فراہم کرسکتے ہیں۔ بابا رام دیوم نے مزید کہا کہ 23مارچ کو رام لیلا میدان کے علاوہ ملک کے مختلف اضلاع میں منعقد کئے جانے والے یوگا مہوتسو میں بھی م

نئی دہلی۔/21مارچ، ( سیاست ڈاٹ کام ) یوگا گرو بابا رام دیو نے آج بی جے پی کے وزارتِ عظمیٰ کے امیدوار نریندر مودی کی زبردست ستائش کرتے ہوئے کہا کہ مودی ہی وہ واحد لیڈر ہیں جو ملک میں مستحکم حکومت فراہم کرسکتے ہیں۔ بابا رام دیوم نے مزید کہا کہ 23مارچ کو رام لیلا میدان کے علاوہ ملک کے مختلف اضلاع میں منعقد کئے جانے والے یوگا مہوتسو میں بھی مودی شرکت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج مودی کے حاسدین کی کوئی کمی نہیں ہے اور وہ ان کی راہ میں رکاوٹیں بھی پیدا کررہے ہیں۔ مودی کے خلاف الزام تراشیاں کی جارہی ہیں جو حقائق پر مبنی نہیں ہیں۔ شرپسند اور ان کے حاسدین یہ چاہتے ہیں کہ مودی وزارتِ عظمیٰ کے جلیل القدر عہدہ پر فائز نہ ہوسکیں لیکن انہیں پوری امید ہے کہ ان کے حاسدین کو مایوسی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ کانگریس اور عام آدمی پارٹی پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کانگریس پہلے ہی تباہی کے دہانے پر پہنچ چکی ہے اور عام آدمی پارٹی کانگریس کے ایجنڈہ پر کام کررہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یوگا مہوتسو ایک سماجی اور روحانی نوعیت کا پروگرام ہوگا جس میں اگر سونیا گاندھی اور راہول گاندھی بھی شرکت کرنا چاہیں تو ہم ان کا خیرمقدم کریں گے۔ یوگا مہوتسو کے انعقاد کے تین اہم مقاصد ہیں۔ اول یہ کہ 23مارچ کو تین مجاہدین آزادی بھگت سنگھ، راج گرو اور سکھدیو نے ملک کی آزادی کے لئے اپنی جانیں نچھاور کردیں۔ یہ 1931ء کا واقعہ ہے۔ مرکز کو ان کی قربانی کا احترام کرتے ہوئے انہیں شہیدوں کا درجہ دینا چاہیئے۔ دوسری اہم بات یہ ہے کہ پروگرام کا انعقاد یوگا کے فروغ کے لئے کیا جارہا ہے اور تیسرا مقصد روحانیت کے ذریعہ ترقی کے نشانے کو حاصل کرنا ہے۔ یاد رہے کہ یوگا مہوتسو ملک کے 650 اضلاع میں منعقد ہوگا جہاں کروڑہا افراد کی شرکت متوقع ہے۔

TOPPOPULARRECENT