Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / مودی کے قافلہ پر نوجوان نے پمفلٹ پھینکا

مودی کے قافلہ پر نوجوان نے پمفلٹ پھینکا

وارناسی 22 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) وارناسی میں ایک نوجوان نے وزیر اعظم نریندر مودی کے قافلہ پر ایک پمفلٹ پھینکا جبکہ مودی اپنے لوک سبھا حلقہ کا دورہ کر رہے تھے ۔ اس واقعہ پر سکیوریٹی عملہ حیرت میں پڑ گیا ۔ یہ واقعہ آج دوپہر کبیر نگر علاقہ میں پیش آیا جہاں وزیر اعظم نے زیر زمین برقی کیبلس بچھائے جانے کے کام کا معائنہ کیا تھا ۔ یہاں آثار قدیمہ عمارتوں کیلئے خصوصی لائٹنگ انتظامات کئے جا رہے ہیں۔ اس سڑک کے دونوں جانب سینکڑوں افراد کھڑے ہوئے تھے اور اس سڑک کو بند بھی کردیا گیا تھا کیونکہ یہاں وزیر اعظم دورہ کر رہے تھے ۔ وہاں موجود ایک نوجوان نے جس کی عمر 20 سال سے زیادہ دکھائی دیتی ہے اور وہ اپنے سر پر پگڑی کی طرح مفلر باندھے ہوا تھا ایک پمفلٹ وزیر اعظم کے قافلہ کی سمت پھینکا جب قافلہ یہاں سے گذر رہا تھا ۔ چوکس پولیس اہلکار فوری وہاں پہونچ گئے تاکہ اسے گرفتار کرسکیں لیکن وہ وہاں سے فرار ہوگیا ۔ اس پمفلٹ کے اسکریننگ شاٹس انٹرنیٹ اور سوشیل میڈیا پر وائرل ہوگئے جہاں اس شخص نے خود کو سماجی کارکن ابھینو ترپاٹھی قرار دیا ہے اور اس نے وزیر اعظم سے کہا کہ وہ یہ تسلیم کریں کہ کاشی کے ان کے دورہ کی مخالفت کی جا رہی ہے ۔ ترپاٹھی نے الزام عائد کیا کہ کاشی کے غریب شہریوں کو بینک عہدیداروں کی جانب سے ہراساں کیا جا رہا ہے ۔ ان مجرمین کے خلاف کارروائی نہیں کی جا رہی ہے جو مندروں ‘ مسجدوں ‘ گرجا گھروں اور گردواروں کے ذمہ دار بن بیٹھے ہیں۔ غلط کردار کے حامل افراد کو وائس چانسلر بنارس ہندو یونیورسٹی بنادیا گیا ہے ۔ حکومت کی جانب سے کئی بلین کی اسکیمات کے اعلان کے باوجود نوجوانوں کو روزگار نہیں مل رہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT