Sunday , November 19 2017
Home / دنیا / مودی ۔ٹرمپ ملاقات میں ایچ ون بی ویزا مسئلہ پر نزاع کا امکان نہیں

مودی ۔ٹرمپ ملاقات میں ایچ ون بی ویزا مسئلہ پر نزاع کا امکان نہیں

دونوں ملکوں کیلئے کامیابی والی صورتحال پیدا ہونے کا یقین ۔ یو ایس ۔ ہندوستان بزنس کونسل کے صدر کا بیان

واشنگٹن 17 جون ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر ڈونالڈ ٹرمپ اور وزیر اعظم نریندرمودی کے مابین ہونے والے پہلی ملاقات میں H-1B ویزا کا مسئلہ نزاعی رہنے کا امکان نہیں ہے اور دونوں قائدین کے مابین بات چیت دونوں ہی کیلئے بہتر صورتحال کا باعث ہوسکتی ہے ۔ایک اعلی امریکی کاروباری مشاورتی گروپ نے یہ بات بتائی ۔ یو ایس ۔ انڈیا بزنس کونسل کے صدر مکیش آگھی نے بتایا کہ وہ مانتے ہیں کہ نریندر مودی کا دورہ امریکہ دونوں ہی ملکوں کیلئے کامیابی کی صورتحال فراہم کریگا ۔ انہیں پورا یقین ہے کہ جب وزیر اعظم مودی یہاں پہونچیں گے تو صورتحال میں بہتری آئے گی ۔ جو مسائل نزاعی ہونے کے اندیشے ظاہر کئے جا رہے ہیں ان مسائل کو بھی بہتر انداز میں حل کیا جاسکے گا ۔ امریکی چیمبر آف کامرس کے تحت یو ایس ۔ انڈیا بزنس کونسل ان بڑے امریکی تاجروں کی نمائندہ تنظیم ہے جو ہندوستان میں بھی تجارت کرتے ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی 26 جون کو صدر ٹرمپ کے ساتھ کئی مسائل پر بات چیت کرنے والے ہیں۔ ان میں دہشت گردی اور ایچ ون بیویزا کے تعلق سے ہندوستان کی تشویش بھی شامل رہے گا ۔ دونوں ملکوں کے قائدین کے مابین یہ اولین ملاقات ہوگی ۔ ٹرمپ کے امریکی صدارت سنبھالنے کے بعد مودی کا یہ پہلا دورہ امریکہ ہے ۔

یہ کہا جا رہا تھا کہ دونوں ملکوں کے مابین باہمی بات چیت کوئی آسان بھی نہیں ہوگی کیونکہ اس میں کئی متنازعہ اور نزاعی مسائل موجود ہیں۔ خاص طور پر امریکہ کی جانب سے ایچ ون بیویزا کی تعداد میں کمی کے فیصلے کے بعد ہندوستان کو تشویش لاحق ہوگئی تھی اور یہ کہا جا رہا تھا کہ امریکہ کے اس فیصلے کے بعد ہندوستانی کمپنیوں اور خاص طور پر آئی ٹی شعبہ کے ملازمین پر اثر ہوسکتا ہے ۔ علاوہ ازیں امریکہ نے تاریخی ماحولیاتی معاہدہ سے بھی دستبرداری اختیار کرلی ہے ۔ نریندر مودی کے 25 جون سے شروع ہونے والے دورہ امریکہ کی تیاریوں میں صنعتی حلقہ کے نمائندے کی حیثیت سے شامل مکیش آگھی کا کہنا ہے کہ ایچ ون بیویزا پروگرام ہوسکتا ہے کہ دونوں ملکوں کے مابین کسی تنازعہ یا اختلاف رائے کا باعث نہ بنے ۔ حالانکہ اس پر اندیشے ظاہر کئے جا رہے ہیں لیکن یہ مسئلہ نزاعی ہونے کی امید نہیں ہے ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ایچ ون بیویزا پروگرام کا مسئلہ دونوں ملکوں کے مابین تعلقات کو متاثر کرنے کی حد تک نزاعی نہیں بن سکتا ۔ انہوں نے بتایا کہ صورتحال ہے کہ امریکی صنعت کو فنی وسائل کی ضرورت ہے تاکہ وہ مزید موثر بن سکیں ۔ مزید مسابقتی موقف حاصل کرسکیں اور ساتھ ہی وہ سمجھتے ہیں کہ ہندوستان سے انہیں اچھی مدد ملتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایچ ون بی پروگرام کا مسئلہ صرف امریکی حکومت تک محدود مسئلہ نہیں ہے بلکہ یہ امریکی تاجر اور کاروباری برادری کیلئے بھی ایک مسئلہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ در اصل طلب و سربراہی کا مسئلہ ہے اور صنعت کو مزید فنی وسائل کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان سے لوگ آتے ہیں تو سہولت ہوتی ہے ۔ انہو نے کہا کہ جہاں تک بزنس کونسل کا سوال ہے وہ ایچ ون بیویزا پروگرام کی حامی ہے اور وہ نہیں سمجھتے کہ اس پر مزید کوئی تنازعہ پیدا ہوسکتاہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس مسئلہ پر ہندوستانی کمپنیوں کیلئے آنے والوں کی تعداد میں کمی آئی ہے۔ مسٹر آگھی نے کہا کہ فی الحال ہند ۔ امریکہ تعلقات بہت اہمیت کے حامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT