موسمی تبدیلی سے وبائی امراض میں اضافہ

کھانسی،نزلہ،درد سر اور اعضاء شکنی کی شکایات

کھانسی،نزلہ،درد سر اور اعضاء شکنی کی شکایات
حیدرآباد 26 اگست (سیاست نیوز) دونوں شہروں حیدرآباد سکندرآباد میں موسم میں ہورہی اچانک تبدیلیاں وبائی امراض کا موجب بن رہی ہے۔ شہر کے دواخانوں میں مریضوں کی تعداد میں اچانک اضافہ دیکھا جارہا ہے۔ دواخانوں سے رجوع ہونے والے مریضوں میں بیشتر مریض کھانسی ،نزلہ ،سردرد اور اعضاء شکنی کی شکایات کے ساتھ رجوع ہورہے ہیں ۔ ماہر اطباء کا کہنا ہے کہ موسمی تبدیلیوں کے باعث یہ صورتحال پیدا ہوئی ہے لیکن اس صورتحال سے بروقت نمٹنا بھی ضروری ہے کیونکہ موسم کی تبدیلی کے باعث ہونے والی یہ بیماریاں شدت کے ساتھ پھیل سکتی ہے اسی لئے ان کی روک تھام کے اقدامات کئے جانے چاہئے ۔ گذشتہ چند ماہ سے دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد میں موسم کی صورتحال عجیب و غریب ہوچکی ہے بعض مقامات پر سخت گرمی اور بعض مقامات پر تیز ہوائیں یا بارش کی صورتحال پائی جارہی ہے جس سے انسانی جسم متاثر ہورہے ہیں۔ ڈاکٹرس کا کہنا ہے کہ اس طرح کے موسم میں اعضاء شکنی ،سردی ،نزلہ ،کھانسی یا بخار جیسی حالت معمول کی بات ہے لیکن ان معمولی امراض کو نظر انداز نہیںکیا جانا چاہئے ۔ شدید گرمی اور اچانک بارش یا بارش کے فوری بعد اچانک شدید گرمی کے باعث جو کیفیت پیدا ہورہی ہے اس میں انسان سوائے احتیاط کے اور کچھ نہیںکرسکتا اسی لئے اس طرح کے موسم میں جسم کو موسمی اثرات سے محفوظ رکھنے کے تمام تر اقدامات کئے جانے چاہئے تا کہ موسم کے مضر اثرات کا صحت پر اثر نہ پڑے ۔ فی الحال شہر میں سردی کھانسی کے علاوہ نزلہ اور بخار جیسے وبائی امراض تیزی سے پھیل رہے ہیں ان امراض سے بچنے کیلئے شہریوں کو اپنے طور پر اقدامات کرنے چاہئے علاوہ ازیںمجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے محکمہ صفائی کے عہدیداروں کو بھی چاہئے کہ وہ کچرے کی نکاسی کے علاوہ شہر کے گنجان آبادی والے علاقوں میں صاف صفائی کو یقینی بنائیں ۔

TOPPOPULARRECENT