Wednesday , November 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / موسم گرما کے آغاز سے قبل کورٹلہ میں پانی کی شدید قلت

موسم گرما کے آغاز سے قبل کورٹلہ میں پانی کی شدید قلت

کورٹلہ /19 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مجلس بلدیہ کورٹلہ کے عہدیداروں اور منتخب عوامی نمائندوں رکن اسمبلی کورٹلہ چیرمین مجلس بلدیہ کورٹلہ ، کونسلروں کی ناہلی کی وجہ سے کورٹلہ کے عوام کو پہلی مرتبہ پانی کو ایک ایک بوند کیلئے ترسنا پڑ رہاہے ۔ کورٹلہ کے عوام کو جو پانی نل سے سربراہ کیا جاتا تھا آج یہ حال ہے کہ چارچار دن تک نل نہیں آرہا ہے اور عوام کو ٹینکروں کے ذریعہ پانی فراہم کیا جارہا ہے ۔ مجلس بلدیہ کورٹلہ کے عہدیداروں اور عوامی نمائندوں کوونسلروں کی عوام کو پانی کی فراہمی کے سلسلے میں پالیسی نہ ہونے کے سبب پانی کے ٹینکروں پر کافی رقم خرچ کی جارہی ہے ۔ ان وارڈوں میں جہاں ٹینکروں کے ذریعہ پانی فراہم کیا ج ارہا ہے عوام کی لمبی قطاریں دیکھی جارہی ہیں ۔ کورٹلہ کے عوام جو پینے کے پانی کیلئے ٹینکروں پر انحصار کر رہے ہیں اکثر محلہ جات میں عوام اپنے گھروں کے سامنے پانی کے ڈرم رکھ کر ڈرم میں پانی بھر رہے ہیں اور عوام کی مجبوریوں کا فائدہ اٹھاکر ڈرم 1200 میں فروخت کئے جارہے ہیں ۔ 31 ویں رکن مجلس بلدیہ کونسل میں عوامی مسائل پر آواز اٹھانے والے کونسلروں کی تعداد نہ کے برابر ہے کیونکہ 31 رکنی مجلس بلدیہ کورٹلہ کی کونسل میں جہاں ٹی آر ایس پارٹی کو معمولی اکثریت حاصل تھی ۔ کانگریس پارٹی کونسلروں کی ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت سے مجلس بلدیہ کورٹلہ کے اجلاس میں تمام نکاحت بغیر مباحث کے منظور کئے جارہے ہیں ۔ کانگریس آئی پارٹی کے کونسلر جنہیں عوام نے ٹی آر ایس پارٹی کی لہر کے باوجود کانگریس آئی پارٹی کے ٹکٹ پر کونسلر منتخب کیاتھا ۔ اپنی ذاتی مفاد کی خاطر ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت اختیار کر رہے ہیں ۔ ایم آئی ایم جس کے پانچ کونسلر ہیں اور جو ٹی آر ایس پارٹی کی حلیف پارٹی ہے ۔ ٹی آر ایس پارٹی جیسے ابتداء میں چیرمین کے عہدہ کے حصول کیلئے ایم آئی ایم کی تائید ضروری تھی ۔ ایم آئی ایم کو نائب صدرنشین کا عہدہ مختص کرتے ہوئے ایم آئی ایم کونسلروں کے ناز و نخرے برداشت کرتے آرہی تھی ۔ لیکن آج حالات برعکس دکھائی دے رہے ہیں ۔ اکثریت کے نشہ میں چور چیرمین مجلس بلدیہ کورٹلہ مسٹر ایس وینوگوپال نہ صرف اپوزیشنکونسلروں کو بلکہ اپنی حلیف پارٹی ایم آئی ایم کے کونسلروں کو بھی خاطر میں نہیں لارہے ہیں ۔ مسٹر کلواکنٹلہ ودیا ساگر راؤ رکن ا سمبلی کورٹلہ جنہوں نے حلقہ اسمبلی کورٹلہ سے لگاتار تین مرتبہ کامیابی حاصل کرتے ہوئے اپنی کامیابیوں کی ہیٹرک درج کی ہے ۔ حلقہ اسمبلی کورٹلہ کے عوامی مسائل کی یکسوئی میں یکسر ناکام ہوگئے ہیں ۔ کورٹلہ کے عوام جو پانی کی شدید قلت کا سامنا کر رہے ہیں ۔کورٹلہ کے عوام کی پانی کی قلت کو دور کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات کرنے میں ناکام ثابت ہوچکے ہیں ۔ کورٹلہ میں پانی کی قلت کا یہ حالہے کہ کورٹلہ کے تمام محلے جات میں عوام پانی کیلئے بورویل تنصیب کرواتے ہوئے دیکھے جارہے ہیں ۔ چند ماہ قبل بورویل کی تنصیب کیلئے 300 فٹ کھدوائی کروانی پڑ رہا تھا ۔ اس بار بورویل کی تنصیب کیلئے 700 تا 1000 فٹ کھدوائی کرنی پڑرہی ہے ۔ بعض مقامات پر بورویل کی تنصیب کیلئے ہزاروں روپئے خرچ کرکے کھدوائی کی جانے کے باوجود عوام کو پانی کا ایک قطرہ بھی دستیاب نہیں ہو رہا ہے ۔ مجلس بلدیہ کورٹلہ کے عوامی نمائندوں رکن اسمبلی کورٹلہ چیرمین اور مجلس بلدیہ عہدیداروں سے واضح پالیسی اختیار کرتے ہوئے عوام کو پینے کا پانی فراہم کرنے کیلئے ٹھوس اقدامات اٹھانے کی اپیل کی جاتی ہے ۔ اگر کورٹلہ میں پانی کی قلت کا یہی حال برقرار رہا تو عوام کا زندگی گذارنا مشکل ہوجائے گا ۔ کورٹلہ کے عوام کی جانب سے رکن اسمبلی کورٹلہ مسٹر کے ودیا ساگر راؤ رکن پارلیمنٹ نظام آباد شریمتی کے کویتا سے جنگی خطوط پر کورٹلہ کے عوام کو پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے اقدامات کرنے کی اپیل کی جاتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT