Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / موسیٰ ندی کو فروغ دینے عنقریب ٹنڈرس کی طلبی

موسیٰ ندی کو فروغ دینے عنقریب ٹنڈرس کی طلبی

نو تشکیل شدہ ’ موسی ریور فرنٹ ڈیولپمنٹ کارپوریشن ‘ کے چیرمین پریم سنگھ راتھوڑ کا بیان
حیدرآباد ۔ 28 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : نئے تشکیل کردہ موسی ریور فرنٹ ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے چیرمین پریم سنگھ راتھوڑ نے کہا کہ موسی ندی کو فروغ دینے کے لیے جلد ہی ٹنڈرس طلب کئے جائیں گے اور اس سلسلہ میں ایک تفصیلی پراجکٹ رپورٹ تیار کی گئی ہے ۔ نمائندہ سیاست سے بات کرتے ہوئے پریم سنگھ راتھوڑ نے کہا کہ سال کے کاموں کے اختتام سے قبل موسی ندی کے فرنٹ ڈیولپمنٹ کو شروع کیا جائے گا اور اس کے لیے جلد ہی ٹنڈرس طلب کئے جائیں گے اور اس کے لیے متعلقہ وزیر اور چیف منسٹر کی منظوری کا انتظار ہے ۔ پریم سنگھ راتھوڑ نے کہا کہ 32 ایس ٹی پی ٹریٹمنٹ پلانس ندی پر قائم کئے جارہے ہیں تاکہ پانی کو ٹریٹ کیا جاسکے اور صرف صاف پانی ہی موسی ندی میں آسکے اور موسیٰ ندی میں گندہ پانی آنے نہیں دیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت تلنگانہ موسیٰ ندی کے 32 کلومیٹر اسٹریچ کو فروغ دینے کے لیے آئندہ ایک سال میں 1665 کروڑ روپئے خرچ کرے گی ۔ اس کارپوریشن نے تین مرحلوں میں انجام دئیے جانے والے اس پراجکٹ کے لیے 1500 کروڑ روپئے کی ریزنگ کو منظوری دی تھی ۔ پہلے مرحلہ میں عثمان ساگر تا گولکنڈہ 33 کلومیٹر طویل ریور ریچ کو شروع کیا جائے گا ۔ ریور فرنٹ ڈیولپمنٹ کے تحت ندی کی صفائی ، کنارے کو بہتر بنانے ، ریور واک وے نیچر گروف برجس اور واٹر پرونس کی تجویز ہے ۔ اس پراجکٹ کے تحت ہر نالہ آوٹ لیٹ پر سیورمینس سلوس گیٹ ، حیدر شاہ کوٹ پر 30MLD سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ ، میر عالم پر 6MLD ایس ٹی پی ، اور عطا پور میں 70MLD سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ کے ساتھ 72 چیک ڈیمس کے علاوہ 15 مقامات پر پارکنگ سہولتوں کی فراہمی کی بھی تجویز ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT