Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں تجارت پر ذہن سازی کا ورکشاپ

مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں تجارت پر ذہن سازی کا ورکشاپ

اقلیتی طلبہ و نوجوانوں کی صلاحیتوں کو ابھارنے امریکی کونسلیٹ سے اشتراک ، رجسٹریشن جاری
حیدرآباد ۔ 20۔ اکتوبر (سیاست نیوز) اقلیتی طلبہ و نوجوانوں میں تجارت سے متعلق ذہن سازی اور ان کی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کے لئے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے امریکی کونسلیٹ حیدرآباد کے اشتراک سے 27 اکتوبر کو قومی ورکشاپ کے انعقاد کا فیصلہ کیا ہے ۔ یونیورسٹی کے چانسلر ظفر سریش والا اس ورکشاپ کے روح رواں ہیں، جس کا عنوان ’’تعلیم برائے انٹر پرینیور شپ‘‘ رکھا گیا ہے۔ ورکشاپ کے انعقاد میں انڈوس انٹر پرینیورس کا تعاون حاصل کیا گیا ہے۔ یہ ورکشاپ 27 اکتوبر کو صبح 10 بجے مولانا آزاد یونیورسٹی حیدرآباد میں منعقد ہوگا۔ ظفر سریش والا نے بتایا کہ ورکشاپ میں شرکت کیلئے رجسٹریشن کی تاریخ میں 25 اکتوبر تک توسیع کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا ورکشاپ ہے جو نومبر میں حیدرآباد میں منعقد ہونے والی عالمی معاشی کانفرنس کی تیاریوں کا تسلسل ہے۔ ورکشاپ میں ملک کی مختلف یونیورسٹیز کے 300 سے زائد طلبہ اور ریسرچ اسکالرس کی شرکت کا امکان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دینی مدارس کے طلبہ کو بھی ورکشاپ میں مدعو کیا گیا ہے ۔ ظفر سریش والا کے مطابق اقلیتی نوجوانوں میں تجارت سے متعلق صلاحیتوں کو ابھارنا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ کاروباری نظریہ کو حقیقی شکل دینا اور کاروباری ذہن سازی کے علاوہ صلاحیتوں کا فروغ ورکشاپ کے مقاصد میں شامل ہے۔ ملک کے ممتاز تاجر اور ماہرین کو مدعو کیا جارہا ہے ۔ ورکشاپ میں طلباء اپنے کاروباری منصوبوں کو پیش کرسکتے ہیں اور بہترین منصوبہ کو انعام سے نوازا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں میں صنعت اور تجارت کے رجحان میں اضافہ کیلئے مساعی کی جارہی ہے ۔ لہذا طلبہ کو اس موقع سے بھرپور استفادہ کرنا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT