Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / مولانا ابوالکلام آزاد اور نہرو کو نظر انداز کرنے کے خلاف عابڈس پر احتجاج

مولانا ابوالکلام آزاد اور نہرو کو نظر انداز کرنے کے خلاف عابڈس پر احتجاج

بی جے پی پر تنقید ، گاندھی بھون میں جلسہ خراج ، وی ہنمنت راؤ ، محمد علی شبیر و دیگر کی شرکت
حیدرآباد ۔ 14 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی نے ملک کے پہلے وزیراعظم جواہر لعل نہرو کو خراج عقیدت پیش کی ۔ مولانا ابوالکلام آزاد اور نہرو کو بی جے پی حکومت کی جانب سے نظر انداز کرنے پر بطور احتجاج کانگریس کے سینئیر قائد وی ہنمنت راؤ نے عابڈس مجسمہ نہرو کے قریب دھرنا منظم کیا ۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی قائدین اپوزیشن کے جانا ریڈی ( اسمبلی ) ، محمد علی شبیر ( کونسل ) ، ورکنگ پریسیڈنٹ تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی بٹی وکرامارک رکن راجیہ سبھا ایم اے خان سابق ارکان پارلیمنٹ وی ہنمنت راؤ ، ایم انجن کمار یادو ، سابق وزراء ایم ششی دھر ریڈی ، ڈی ناگیندر رکن اسمبلی سمپت کمار ارکان قانون ساز کونسل ایم رنگاریڈی ، پی سدھاکر ریڈی ، جنرل سکریٹریز تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ایس کے افضل الدین ، سید عظمت اللہ حسینی ، عظمیٰ شاکر کے علاوہ دیگر نے گاندھی بھون میں نہرو کو بھر پور خراج عقیدت پیش کیا ۔ بعد ازاں مجسمہ نہرو عابڈس پر گلہائے عقیدت پیش کیا ۔ وی ہنمنت راؤ نے عابڈس مجسمہ نہرو پر صبح 10 تا 1 بجے دوپہر تک احتجاجی دھرنا منظم کیا جس کی کانگریس کے تمام قائدین نے تائید کی ۔ کانگریس قائدین مودی کی تاناشاہی نہیں چلے گی نعرے لگاتے ہوئے احتجاج کررہے تھے ۔ اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ مجاہد آزادی ملک کے پہلے وزیراعظم پنڈت جواہر لعل نہرو کی مرکزی حکومت اور وزیراعظم نریندر مودی نے توہین کی ہے ۔ آج اخبارات میں دئیے گئے اشتہارات میں جواہر لعل نہرو کا نام اور تصویر دونوں غائب کرتے ہوئے توہین کی ہے ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے ۔ صرف یوم اطفال کا اشتہار شائع کیا گیا ہے جس میں صدر جمہوریہ ہند پرنب مکرجی اور وزیراعظم نریندر مودی کی تصاویر اور نام شائع کیے گئے ۔ 11 نومبر کو مولانا ابوالکلام آزاد کی 128 ویں یوم پیدائش کو بھی مرکزی حکومت نے نظر انداز کرتے ہوئے ملک کی جدوجہد آزادی میں حصہ لینے اور جیل جاتے ہوئے ہر طرح کی قربانیاں دینے والے قومی ہیروز کی توہین کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سردار پٹیل کی ستائش اور نہرو کی توہین کی جارہی ہے ۔ ملو بٹی وکرامارک نے کہا کہ جدوجہد آزادی میں اہم رول ادا کرنے والے نہرو نے ملک کو معاشی طور پر مستحکم کرنے اور ترقی دینے کے لیے پنچ سالہ منصوبہ تیار کیا ۔ امریکہ اور روس سوپر پاور بن کر ابھرتے وقت نہرو نے تحریک نا وابستہ شروع کرتے ہوئے دنیا کے مختلف ممالک کو ایک پلیٹ فارم پر اکھٹا کیا ۔ مودی حکومت سردار پٹیل کو ملک کا پہلے وزیراعظم نہ بنانے کا کانگریس پر الزام عائد کررہی ہے ۔ جب کہ اڈوانی نے بی جے پی کو مستحکم کرنے کے لیے کافی محنت کیا ہے مگر انہیں وزیراعظم بنانے کے بجائے نریندر مودی کو کیوں وزیراعظم بنایا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT