Tuesday , October 23 2018
Home / جرائم و حادثات / مولانا نصیر الدین کی احتیاطی گرفتاری و رہائی

مولانا نصیر الدین کی احتیاطی گرفتاری و رہائی

حیدآباد ۔5مارچ ( سیاست نیوز) شام میں جاری لڑائی کے دوران بے قصور شہریوں کی ہلاکتوں کے خلاف ایران قونصل خانہ حیدرآباد کو جانے کی کوشش کے دوران پولیس نے ناظم وحدت اسلامی تلنگانہ مولانا محمد نصیر الدین کو احتیاط کے طور پر آج صبح کی اولین ساعتوں میں حراست میں لے لیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ مولانا نصیر الدین آج صبح 10بجے بنجارہ ہلز میں واقع ایران قونصل خانہ پہنچ کر وہاں کے حکام کو ایک یادداشت پیش کرتے ہوئے شام میں قتل عام کے خلاف احتجاج درج کرانے کا منصوبہ رکھتے تھے ۔ اطلاع ملنے پر پولیس نے رات سے چوکسی اختیار کرلی اور آج صبح فجر کے وقت مولانا نصیر الدین کو ان کی رہائش گاہ سے حراست میں لے لیا ۔ سعید آباد پولیس کی جانب سے کی گئی اس کارروائی کے بعد انہیں پولیس اسٹیشن منتقل کیا گیا اور انہیں آج شام تک محروس رکھنے کے بعد شخصی مچلکہ پر رہا کردیا ۔ انسپکٹر سعیدآباد کے ستیہ نے بتایا کہ مولانا نصیر الدین کو سی آر پی سی کے دفعہ 151 احتیاطی گرفتاری کے تحت حراست میں لیا گیا تھا ۔ رہائی کے بعد مولانا نصیر الدین نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ شام میں جاری خانہ جنگی کے دوران کئی معصوم شہریوں بالخصوص کمسن بچوں کو شہید کیا جارہا ہے اور اس میں ایران کا مکمل تعاون ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شام کی موجودہ صورتحال میں ایران کو چاہیئے کہ وہ اپنی مداخلت شام کی داخلی معاملات میں نہ کرے ‘ چونکہ باہری طاقتوں کی مدد سے شام کی فوج معصوم عوام کو نشانہ بنارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT