Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / مچنتل میں سورنا بھارت ٹرسٹ کا افتتاح ، چیف منسٹر کے سی آر اور وینکیا نائیڈو کا خطاب

مچنتل میں سورنا بھارت ٹرسٹ کا افتتاح ، چیف منسٹر کے سی آر اور وینکیا نائیڈو کا خطاب

شمس آباد ۔ 16 جنوری (سیاست نیوز) شمس آباد کے موضع مچنتل میں سورنا بھارت ٹرسٹ کا حیدرآباد چیاپٹر ہیڈ آفس کا افتتاح ریاستی چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ اس موقع پر چیف منسٹر نے اپنی مخاطبت میں کہا کہ سورنا بھارت ٹرسٹ 2001ء میں نیلور میں قائم کیا گیا جو گذشتہ 16 سالوں سے بہترین خدمات انجام دیتے ہوئے سماج میں تبدیلیاں لارہا ہے اور تعلیم کے ساتھ روزگار کے مواقع بھی فراہم کررہا ہے۔ اس ٹرسٹ کا مقصد دیہی علاقوں میں تعلیم کو عام کرنا اور ہر گھر تک تعلیم کو پہنچانا ہے۔ تعلیم کے ذریعہ ہی ملک میں ترقی ہوگی اور ریاست تلنگانہ میں تعلیم پر خاص توجہ دی جارہی ہے۔ ریاستی حکومت کی جانب سے ٹرسٹ کے تمام اراکین کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ یہ ٹرسٹ دیہی علاقوں کی ترقی میں اہم رول ادا کررہا ہے۔ ہر ادارہ کو عوام کی خدمت اور بھلائی کیلئے ہر ایک کو آگے آنے کی ضرورت ہے۔ مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ٹرسٹ کا مقصد کسانوں، خواتین اور نوجوانوں کی ترقی اور خدمت کرنے کیلئے قائم کیا گیا اور اس ٹرسٹ کے تحت 20 ہزار سے زائد افراد فائدہ حاصل کرچکے ہیں۔ انہوں نے اپنی مخاطبت میں کہا کہ ہم ہماری تہذیب کو بھول رہے ہیں۔ ہماری تہذیب کو برقرار رکھنے کیلئے بھی اقدامات کرنے چاہئے۔ اس کے ساتھ ساتھ انگریزی کا اثر ہم پر کافی ہوچکا ہے۔ ہم انگریزی میں مہارت رکھتے ہیں لیکن مادری زبان سے ناواقف ہیں اور اس کو بھول رہے ہیں جس سے ہماری تہذیب پر کافی اثر پڑے گا۔ مادری زبان کی سماج میں کافی اہمیت ہے۔ وزیراعظم نے ملک میں ترقی کیلئے کئی طرح کے پروگرامس کو انجام دیا اور خاص کر سوچھ بھارت کے ذریعہ ملک کو سرسبز و شاداب بنایا جارہا ہے، جس سے ہمارا ملک ترقی کرسکتا ہے۔ ملک میں گذشتہ چند ماہ میں بڑی تبدیلی آئی ہے اور بہت جلد ہمارا ملک ڈیجیٹل انڈیا بن جائے گا۔ اس موقع پر منوہر پاریکر مرکزی وزیر، بنڈارو دتاتریہ مرکزی وزیر، سریش پاٹل آندھرا بینک چیرمین، کے سرینواس راؤ آندھرا وزیر، کنڈہ وشویشور ریڈی رکن پارلیمنٹ چیوڑلہ، مہیندر ریڈی ٹرانسپورٹ منسٹر، ملاریڈی ملکاجگری رکن پارلیمنٹ، کے لکشمن تلنگانہ بی جے پی صدر، پرکاش گوڑ راجندر نگر رکن اسمبلی کے علاوہ عوام کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT