Sunday , December 17 2017
Home / سیاسیات / مکل رائے، ترنمول کانگریس اور راجیہ سبھا سے مستعفی

مکل رائے، ترنمول کانگریس اور راجیہ سبھا سے مستعفی

تمام ارکان ’’نوکر‘‘ نہیں بلکہ ساتھی ہونا چاہئے : باغی قائد کا ردعمل
نئی دہلی ۔11 اکٹوبر (ساست ڈاٹ کام) ترنمول کانگریس کے باغی لیڈر مکل رائے نے آج اپنی پارٹی اور راجیہ سبھا کی رکنیت سے استعفیٰ دیدیا اور کہا کہ کسی پارٹی میں تمام ارکان ’’نوکر‘‘ نہیں بلکہ ساتھی ہونا چاہئے۔ رائے نے راجیہ سبھا کے صدرنشین ایم وینکیا نائیڈو سے ملاقات کرتے ہوئے ایوان کی رکنیت سے اپنا استعفیٰ پیش کیا اور کہا کہ وہ بہ دل نخواستہ اس پارٹی کو چھوڑ رہے ہیں۔ مکل رائے نے جو کبھی ٹی ایم سی میں اس کی صدر ممتابنرجی کے بعد دوسرے اہم ترین قائد بھی رہ چکے ہیں، کہاکہ کسی پارٹی میں تمام ارکان کو ’’نوکر‘‘ نہیں بلکہ ساتھی کی حیثیت سے رہنا چاہئے، لیکن ’’ایک شخص‘‘ کی بالادستی سے چلنے والی پارٹیوں میں ایسا نہیں ہوتا۔ بی جے پی اپنی شمولیت کی قیاس آرائیوں کے درمیان مکل رائے نے یاد دلایا کہ 1998ء میں جب ان کی پارٹی نے زعفرانی جماعت سے نشستوں پر مفاہمت کی تھی، اس (ٹی ایم سی) کی قیادت نے کہا تھا کہ بی جے پی فرقہ پرست جماعت نہیں ہے۔ انہوں نے یاد دلایا کہ الیکشن کمیشن نے جب ٹی ایم سی کو ایک سیاسی جماعت کی حیثیت سے تسلیم کیا تھا، اس وقت دستخط کنندگان میں وہ بھی شامل تھے۔ مکل رائے کو ٹی ایم سی نے مخالف پارٹی سرگرمیوں کی بنیاد پر معطل کردیا تھا اور پارٹی نے ان کی جانب سے عائد کردہ الزامات کو مسترد کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT