Wednesday , December 19 2018

مکہ مسجد اور شاہی مسجد باغ عامہ کے ملازمین اور سیکوریٹی گارڈس کی تنخواہوں پر سخت نوٹ

ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب محمد جلال الدین اکبر کی سکریٹری اقلیتی بہبود جناب سید عمر جلیل سے بات چیت

ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب محمد جلال الدین اکبر کی سکریٹری اقلیتی بہبود جناب سید عمر جلیل سے بات چیت
حیدرآباد۔/22جنوری، ( سیاست نیوز) مکہ مسجد اور شاہی مسجد باغ عامہ کے ملازمین اور ہوم گارڈز کی تنخواہوں کی عدم اجرائی کا ڈائرکٹر اقلیتی بہبود جناب جلال الدین اکبر نے نوٹ لیا ہے۔ انہوں نے آج اس مسئلہ پر سکریٹری اقلیتی بہبود جناب سید عمر جلیل سے بات چیت کی اور اس بات کی خواہش کی کہ حکومت کی جانب سے دونوں مساجد کے ملازمین اور سیکورٹی ڈیوٹی پر تعینات ہوم گارڈز کی تنخواہوں کیلئے بجٹ کی عاجلانہ اجرائی کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کی تیاری میں بعض کوتاہیوں کے سبب ملازمین کی تنخواہوں کے سلسلہ میں علحدہ مد متعین نہیں کیا گیا جس کے باعث بجٹ میں منظوری نہیں دی گئی۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ فینانس کے عہدیداروں سے نمائندگی کرتے ہوئے بجٹ کی اجرائی کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے اس سلسلہ میں سکریٹری اقلیتی بہبود کو بجٹ کی ضرورت اور دیگر تفصیلات کے سلسلہ میں ایک مکتوب روانہ کیا۔ مکتوب میں کہا گیا ہے کہ مالیاتی سال2014-15 کے منصوبہ جاتی مصارف کے تحت دونوں اداروں کیلئے کوئی بجٹ مختص نہیں کیا گیا جبکہ غیر منصوبہ جاتی مصارف کے تحت صرف 6لاکھ 14ہزار روپئے مختص کئے گئے جو تنخواہوں کی ادائیگی کے سلسلہ میں ناکافی ہیں۔ ضلع کلکٹر حیدرآباد سے گرانٹ اِن ایڈ کے طور پر رقم حاصل کرتے ہوئے اب تک تنخواہیں ادا کی جارہی ہیں۔ ماہ ڈسمبر کی تنخواہ ابھی تک ادا نہیں کی گئی جس کے سبب دونوں مساجد کے ملازمین اور ہوم گارڈز عہدیداروں سے مسلسل نمائندگی کررہے ہیں۔ انہوں نے ڈسمبر تا مارچ تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے 9لاکھ 56ہزار 800روپئے کی منظوری کی سفارش کی۔ اس کے علاوہ 3ریٹائرڈ ملازمین کو معاوضہ کی ادائیگی کے سلسلہ میں 6لاکھ روپئے جاری کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ انہوں نے ہوم گارڈز کی چار ماہ کی تنخواہوں کیلئے 9لاکھ روپئے جاری کرنے کی حکومت سے سفارش کی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اسپیشل سکریٹری اقلیتی بہبود نے اس مسئلہ کو محکمہ فینانس سے رجوع کرتے ہوئے عاجلانہ یکسوئی کا تیقن دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT