Thursday , November 15 2018
Home / شہر کی خبریں / مکہ مسجد بم دھماکوں کے ملزمین بے قصور ثابت ہونے پر اظہار حیرت

مکہ مسجد بم دھماکوں کے ملزمین بے قصور ثابت ہونے پر اظہار حیرت

تحقیقاتی ایجنسی ثبوت فراہم کرنے میں ناکام ، سروے ستیہ نارائنا
حیدرآباد ۔ 16 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز) : سابق مرکزی مملکتی وزیر سروے ستیہ نارائنا نے مکہ مسجد بم دھماکہ کے تمام ملزمین کو بے قصور قرار دینے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تاریخی مکہ مسجد کے بم دھماکہ میں 9 افراد ہلاک ہوئے تھے اس کے ذمہ دار پھر کون ہیں ۔ 11 سال تک مقدمہ چلنے پر بھی قصور وار کا کوئی پتہ نہیں چلا ۔ بم دھماکہ میں ملوث ہونے والوں کو سخت سے سخت سزا دینے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کیس کو کمزور کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ۔ اگر کوئی قصور نہیں ہے تو بم دھماکہ کیسے ہوا ۔ قومی تحقیقاتی ایجنسیاں ثبوت فراہم کرنے میں ناکام کیوں ہوئی اس پر بھی سنجیدگی سے غور کرنے کی ضرورت ہے ۔ اس کے پیچھے کون ہیں ۔ اس کا بھی جائزہ لینے کا مطالبہ کیا ۔ سروے ستیہ نارائنا نے کہا کہ گاندھی خاندان جب تک برسر اقتدار تھا تب تک سیکولرازم مستحکم تھا فرقہ پرست بی جے پی کے ہاتھ میں اقتدار پہونچ جانے کے بعد سیکولرازم کے ساتھ جمہوریت بھی خطرے میں پڑ گئی ہے ۔ ملک بھر میں غیر یقینی صورتحال پیدا ہوئی ہے ۔ اقلیتوں اور دلتوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ ان کے کھانے پینے پر امتناع عائد کیا جارہا ہے ۔ اظہار خیال کی آزادی پر پابندی لگائی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے ۔ جہاں تمام مذاہب اور طبقات کو مساوی حقوق دئیے گئے ہیں ۔ جمہوریت کا صرف کانگریس پارٹی ہی تحفظ کرسکتی ہے ۔ پبلک پروسیکوٹر کی ناکامی کی وجہ سے ملزم بے قصور ثابت ہوئے ۔ این آئی اے خصوصی کورٹ کے فیصلہ کا جائزہ لینے کے بعد کانگریس پارٹی اپنے ردعمل کا اظہار کرے گی ۔ مناسب ثبوت پیش کرنے میں این آئی اے ناکام ہوچکی ہے ۔ جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT