Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / مہاتما گاندھی بس اسٹیشن میں آٹو میٹیڈ پارکنگ سسٹم

مہاتما گاندھی بس اسٹیشن میں آٹو میٹیڈ پارکنگ سسٹم

پارکنگ فیس کی زائد وصولی کی شکایت پر آر ٹی سی عہدیداروں کا جائزہ
حیدرآباد ۔ 10 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : ایشیا کے سب سے بڑے بس اسٹیشن مہاتما گاندھی بس اسٹیشن ( ایم جی بی ایس) میں آٹو میٹیڈ پارکنگ سسٹم متعارف کرانے کا آر ٹی سی جائزہ لے رہی ہے ۔ ایم جی بی ایس میں روزانہ ہزاروں بسوں کی آمد و رفت رہتی ہے ۔ پارکنگ کے لیے سینکڑوں کی تعداد میں گاڑیاں بس اسٹانڈ پہونچتی ہیں ۔ سرکاری اعداد و شمار کے لحاظ سے روزانہ ایم جی بی ایس سے 70 ہزار مسافرین بسوں میں سفر کرتے ہیں اور ایک ہزار سے زائد بائیکس ٹو وہیلر گاڑیاں پارک کی جاتی ہیں اور ساتھ ہی 300 کاریں بھی پارک کی جاتی ہیں ۔ مسافرین کی اکثریت نے آر ٹی سی عہدیداروں سے شکایت کی ہے کہ مقررہ فیس سے زیادہ پارکنگ فیس وصول کی جارہی ہے ۔ جس کے بعد آر ٹی سی کے عہدیداروں نے ایم جی بی ایس میں آٹومیٹیڈ پارکنگ سسٹم متعارف کرانے کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ فی الحال ایم جی بی ایس میں 4 پارکنگ مقامات ہیں ۔ پہلے مرحلے میں 2 پارکنگ مقامات کو آٹو میٹیڈ پارکنگ سے مربوط کرنے کی تیاریاں کی جارہی ہیں ۔ ایم جی بی ایس میں 3 گھنٹے کی پارکنگ کے لیے ٹو وہیلرس سے 5 روپئے 15 گھنٹوں کے لیے 10 اور 24 گھنٹوں کے لیے 20 روپئے فیس مقرر کی گئی ہے ۔ تاہم پارکنگ مقامات کو لیز پر حاصل کرنے والوں کی جانب سے زیادہ پارکنگ فیس وصول کرنے کی شکایتیں وصول ہورہی ہیں ۔ نئے آٹو میٹیڈ سسٹم پر عمل آوری سے جس طرح مالس ملٹی پلکس کے پاس فیس وصول کی جارہی ہے ۔ ایم جی بی ایس پر بھی وہی پالیسی لاگو کی جائے گی ۔ جہاں پر گاڑیاں پارک کرنے والوں کو گھنٹہ کے حساب سے پارکنگ فیس وصول کی جائے گی ۔ پارکنگ کے بعد گاڑی لیجاتے وقت پارکنگ گیٹ کے قریب انٹری ایگزٹ ٹیم پر مشتمل سلپ گاڑیوں کے مالکین کو دی جائے گی ۔ جس کی بنیاد پر پارکنگ فیس ادا کرنا پڑے گا ۔ یہ سب آٹو میٹیڈ سسٹم سافٹ ویر کی بنیاد پر عمل کیا جائے گا ۔ جس سے زیادہ پارکنگ فیس وصول کرنے کی شکایت ختم ہوجائے گی ۔ جتنے گھنٹے گاڑی پارک کی جائے گی ۔ اتنی ہی فیس ادا کرنی پڑے گی ۔ اس کی کامیابی کے بعد ماباقی دو پارکنگ کے مقامات کو بھی آٹو میٹیڈ سسٹم سے مربوط کیا جائے گا ۔۔

TOPPOPULARRECENT