Friday , July 20 2018
Home / شہر کی خبریں / مہاتما گاندھی لفٹ ایریگیشن پراجکٹ کو مارچ 2019ء تک مکمل کرلیا جائیگا : جوپلی کرشنار اؤ

مہاتما گاندھی لفٹ ایریگیشن پراجکٹ کو مارچ 2019ء تک مکمل کرلیا جائیگا : جوپلی کرشنار اؤ

شمس آباد ۔ 17 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ پریس اکیڈیمی کی جانب سے مہاتما گاندھی (کلواکرتی) لفٹ ایریگیشن پراجکٹ کا تفصیلی معائنہ کروایا گیا۔ الم نارائنا پریس اکیڈیمی چیرمین کی قیادت میں صحافیوں کی گاڑی کو ہری جھنڈی دکھا کر روانہ کیا گیا اور مہاتما گاندھی لفٹ ایریگیشن پراجکٹ کو جوپلی کرشنا راؤ وزیر پنچایت راج و دیہی ترقیات نے صحافیوں کو تفصیلی معائنہ کروایا۔ اس موقع پر جوپلی کرشنا راؤ نے بتایا کہ پالمور رنگاریڈی پراجکٹ کی تکمیل پر 74 منڈلس کے 1428 گاؤں میں پانی کا مسئلہ ختم ہوجائے گا۔ پہلے مرحلہ میں ناگرکرنول، محبوب نگر، رنگاریڈی، وقارآباد اور نلگنڈہ اضلاع کو پانی کی سربراہی کی جائے گی جبکہ دوسرے مرحلہ کیلئے 10 لاکھ ایکر اراضی کے ذریعہ پانی کو پانچ اضلاع کی سربراہی کے اقدامات کئے جارہے ہیں جہاں واٹر لفٹنگ کو پانچ مرحلوں کے ذریعہ پمپنگ کرکے سری سیلم ریزرو ایلور کولاپور سے سربراہ کیا جائے گا۔ مہاتما گاندھی لفٹ ایریگیشن پراجکٹ ایشیاء کا سب سے بڑا پراجکٹ ہے۔ کولاپور، ناگرکرنول، اچم پیٹ، جڑچرلہ اور ونپرتی اسمبلی حلقوں کے 27 منڈلس کے 303 گاؤں کو پانی سربراہ کیا جائے گا۔ پہلے مرحلہ میں ایلور پراجکٹ کا اے پی چیف منسٹر افتتاح کرچکے ہیں۔ دوسرے مرحلہ میں جونالاجوگوڑہ کام تکمیل کے مراحل پر ہے اور تیسرے مرحلہ کا گڈسا پلی گٹو کام تیزی سے جاری ہے۔ ان پراجکٹس کیلئے 21887.58 ایکر اراضی کی ضرورت ہے جس میں سے 19029.19 ایکڑ اراضی حاصل کرلی گئی جبکہ 2867.39 ایکر اراضی کی ضرورت ہے۔ ان پراجکٹس کیلئے 4896.24 کروڑ کی ضرورت ہے اور 2017-18ء کیلئے ایک ہزار کروڑ منظور کئے گئے۔ گذشتہ بجٹ اور جاریہ سال بجٹ کے ذریعہ کام کو تیزی سے تکمیل کیا جارہا ہے۔ مارچ 2019ء تک کام تکمیل کرکے پانی کی سربراہی کو یقینی بنایا جائے گا۔ ناگرکرنول میں منعقد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جوپلی کرشنا راؤ نے کہا کہ ان پراجکٹس کو کانگریس عدالت میں مقدمہ دائر کرتے ہوئے رکوادیا تھا جس کی وجہ سے کام کو ایک سال کے عرصہ تک روکنا پڑا تھا ورنہ ابھی تک یہ کام تکمیل ہوجاتا۔ چیف منسٹر نے عوام کو پانی گھر گھر پہنچانے کا جو وعدہ کیا تھا وہ مشن بھگیراتا کے ذریعہ مکمل کیا جارہا ہے اور بہت جلد عوام کو پانی کی سہولت ہوجائے گی۔ چیف منسٹر نے 24 گھنٹے برقی سربراہی کا اعلان کیا تھا اس کی کامیابی پر اپوزیشن خاص کر کانگریس پریشان ہے۔ کانگریس ان پراجکٹس کے ذریعہ ٹی آر ایس حکومت کو بدنام کرنے کی کوشش کررہی ہے جبکہ کانگریس نے ان کے دور میں کچھ نہیں کیا۔ ٹی آر ایس کو بدنام کرکے اقتدار حاصل کرنے کی خواہش ان کی کبھی پوری نہیں ہوگی۔ کانگریس صرف زبانی خرچ کرتے ہوئے عوام کو گمراہ کرنے کی کوشش کررہی ہے۔ کولاپور پراجکٹ دنیا کا سب سے بڑا پراجکٹ ہوگا اس کی تکمیل کے بعد محبوب نگر میں پانی کی قلت نہیں ہوگی۔ محبوب نگر اور اطراف کے علاقوں میں ہر جگہ سرسبزوشاداب دکھائی دے رہا ہے۔ گذشتہ حکومتوں کی ناکامی کی وجہ سے خشک علاقہ محبوب نگر سرسبز و شاداب ہوگیا ہے۔ کولاپور کو ہم نے کوہ نور میں تبدیل کردیا ہے۔ بہت جلد ہماری یہ محنت رنگ لائے گی اور 2019ء انتخابات تک ہمارے وعدوں کی تکمیل ہوجائے گی۔ اپوزیشن کے نیک ارادے چکناچور ہوجائیں گے۔ ہم جو وعدے کئے تھے ان وعدوں کی تکمیل پر عوام خوش ہیں۔ صرف اپوزیشن ہی ناراض ہے کیونکہ انہیں ناکامی کا خوف ابھی سے ہی پیدا ہوگیا ہے۔ الم نارائنا پریس اکیڈیمی چیرمین نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں نے ٹی آر ایس کو بدنام کرنے کیلئے ہر ممکن کوشش کی لیکن ہم نے راست ان پراجکٹس کا معائنہ کیا جس پر چیف منسٹر اور حکومت کے قابل ہے چاہئے کہ وسیع پراجکٹ کو تکمیل کے مراحل پر لے جارہے ہیں ان کی کامیابی اپوزیشن کیلئے ناکامی ثابت ہورہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT