Tuesday , December 12 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مہاتما گاندھی کلواکرتی لفٹ ایریگیشن کی 32 سال بعد عنقریب تکمیل

مہاتما گاندھی کلواکرتی لفٹ ایریگیشن کی 32 سال بعد عنقریب تکمیل

کرشنا ندی سے کلواکرتی پانی کی آمد پر عوام کا ہجوم

کلواکرتی ۔ 14 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : کلواکرتی کی خشک سالی کو مد نظر رکھتے ہوئے یہاں کے کسانوں کو کرشنا ندی سے پانی کی فراہمی کے لیے 1985 میں ٹی انجیا چیف منسٹر متحدہ آندھرا پردیش نے کئی ایک نمائندگیوں احتجاج و دیگر دباؤ کے ذریعہ اس کا سنگ بنیاد رکھا تھا ۔ جس کا نام شروع میں کلواکرتی لفٹ اریگیشن تھا بعد میں چیف منسٹر وائی ایس راج شیکھر ریڈی نے 2005 میں اس کا نام مہاتما گاندھی کلواکرتی لفٹ اریگیشن رکھ کر 2990 کروڑ کے صرفہ سے اس کے کاموں کا آغاز عمل میں لایا تھا ۔ اس بعد سے آج تک یہ کام پائے تکمیل تک تو نہ پہنچا لیکن اپنی آخری حدود میں ضرور داخل ہوگیا ہے اس پراجکٹ کا آغاز کرشنا ندی سے شروع ہو کر حلقہ اسمبلی کلواکرتی کے آخری حدود ماڈگل تک پہنچا ہے جب کے یہ پانی آج صرف کلواکرتی منڈل تک ہی پہنچا ہے آگے کے کاموں کی تکمیل ابھی جاری ہے جہاں اس پراجکٹ کو کلواکرتی پہنچنے میں 32 سال لگ گئے ۔ آخری حدود تک پتہ نہیں اور کتنا عرصہ لگے گا ۔ جب کے وائی ایس راج شیکھر ریڈی نے جو رقم مکمل بجٹ پائے تکمیل کے لیے متعین کیا تھا وہ یہاں پہنچنے سے قبل ہی ختم ہوگیا ۔ جس کے بعد موجودہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے جملہ 19 ہزار کروڑ روپئے دوبارہ جاری کرتے ہوئے اپنی خصوصی توجہ لیتے ہوئے اپنے وزراء خاص کر وزیر آبپاشی ہریش راؤ کو اس کی ذمہ داری دیتے ہوئے جلد سے جلد اس کے تکمیل کا حکم دیا تھا ۔ اس درمیان جہاں جس مقصد کو مد نظر رکھتے ہوئے یہ پراجکٹ شروع کیا گیا تھا اس کو پورا ہونے ہی کئی ایک دشوار کن مراحل سے گذرنا پڑا جس میں سیاسی پارٹیاں اور عوامی قائد بھی برابر کے شامل ہیں ۔ کلواکرتی کو پہنچنے والے پانی کو درمیان میں جس کو جہاں موقع ملتا اپنا اپنا ہاتھ صاف کرتے چلے گئے ۔ جس میں قابل ذکر ونپرتی ایم ایل اے چنا ریڈی اور نرنجن ریڈی کے ساتھ ساتھ کولاپور کے جوپلی کرشنا راؤ اور ناگر کرنول کے لیے ناگم جناردھن ریڈی اور مرلی جناردھن کے ساتھ ساتھ اچم پیٹ کے لیے یم ایل اے گولا بالراج برابر کے شریک ہیں ۔ ان حالات کو دیکھتے ہوئے یہاں کے تمام سیاسی قائدین نے ایک پلیٹ فارم پر جمع ہو کر متحدہ جدوجہد شروع کی ۔ مقامی ایم ایل اے ومشی چند ریڈی اس کو اپنی پارٹی کا تاریخی کارنامہ قرار دیتے ہوئے اس کے لیے جدوجہد شروع کردی ۔ جس کے لیے انہیں کئی مرتبہ اسمبلی میں چیف منسٹر اور ہریش راؤ سے تلخ کلامی میں بحث بھی کرنا پڑا اور کمیٹی ایک مرتبہ کھلے عام آمنے سامنے بحث و مباحثہ بھی کرنا پڑا جس کا بالاخر نتیجہ یہ نکلا کہ آج اس پراجکٹ کا پانی کلواکرتی پہنچ رہا ہے جس پر انہوں نے خاص کر چیف منسٹر اور سابق حکمرانوں کے ہمراہ عوامی قائدین ، کسانوں اور خاص کر میڈیا کا بہت بہت شکریہ ادا کیا ۔ ان سب کی محنتوں کے سبب بلاخر کلواکرتی کو یہ کامیابی حاصل ہوئی ہے جس کا انہوں نے یلکٹہ تانڈہ کے پاس کنال کے بازو پوجا کرتے ہوئے پانی کو خوش آمدید کہا ۔ اس موقع پر کثیر تعداد میں کسان عوام اور کانگریس قائدین موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT