Saturday , December 16 2017
Home / سیاسیات / مہاراشٹرا اسمبلی سے 19 اپوزیشن ارکان معطل

مہاراشٹرا اسمبلی سے 19 اپوزیشن ارکان معطل

ممبئی ، 22 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس اور این سی پی کے 19 اپوزیشن ایم ایل ایز آج مہاراشٹرا اسمبلی سے نو ماہ کیلئے معطل کردیئے گئے کہ وہ گزشتہ ہفتے ایوان میں بجٹ پیشکشی کے دوران گڑبڑ پیدا کرنے میں ملوث ہوئے۔ نو کانگریسی اور 10 این سی پی ارکان کی 31 ڈسمبر تک معطلی اس ضمن میں ایک قرارداد کے بعد ہوئی جسے وزیر پارلیمانی امور گریش باپٹ نے پیش کیا اور اسمبلی نے منظور کرلیا۔ اپوزیشن ارکان نے اسمبلی میں 18 مارچ کو وزیر فینانس سدھیر منگتیوار کی بجٹ پیشکشی کسانوں کے قرض کی معافی کا مطالبہ کرتے ہوئے درہم برہم کی تھی۔ باپٹ نے کہا کہ اپوزیشن ایم ایل ایز نے خود شرمناک اور غیردستوری طرزعمل کا مظاہرہ کیا۔ انھوں نے کہا کہ ہر کسی کو اپنی رائے ظاہر کرنے کا حق ہے لیکن ریاستی بجٹ کی نقل کو ایوان کے باہر نذر آتش کردینا کبھی نہیں ہوا تھا۔ انھوں نے مزید کہا کہ یہ ارکان بیانرس لہرانے، ڈفلی بجانے، نعرے بازی کرنے اور اسپیکر کی ہدایات کے عدم احترام کی پاداش میں معطل کئے جارہے ہیں۔ معطل ایم ایل ایز میں امر کالے، وجئے وڈیتوار، ہرش وردھن سکپال، عبدالستار، ڈی پی ساونت، سنگرام تھوپٹے، امیت زانک، کنال پاٹل، جئے کمار گورے (تمام کانگریسی) کے علاوہ بھاسکر جادھو، جتندر اوہاد، مدھوسدھن کیندرے، سنگرام جگتاپ، اودھت تتکارے، دیپک چوان، دتہ بھارنے، نرہری جروال، وائیبھو پچاڈ اور راہول جگتاپ (تمام این سی پی) شامل ہیں۔ اپوزیشن لیڈر رادھا کرشن وکھے پاٹل نے کہا کہ حکومت تمام اپوزیشن ایم ایل ایز کو معطل کرسکتی ہے لیکن وہ کسانوں کے مسائل اٹھاتے رہیں گے۔ اس معطلی کا اعلان ایوان کے خصوصی اجلاس میں صبح 10 بجے کیا گیا۔ وکھے پاٹل نے کہا کہ اپوزیشن اس معطلی کی منسوخی تک ایوان کی کارروائی کا بائیکاٹ کرے گی۔ وقفہ سوالات کا اپوزیشن ارکان کی غیرحاضری میں 11 بجے دن احیاء ہوا۔

TOPPOPULARRECENT