Friday , June 22 2018
Home / سیاسیات / مہاراشٹرا : مسلم تحفظات پر بی جے پی کا ٹال مٹول

مہاراشٹرا : مسلم تحفظات پر بی جے پی کا ٹال مٹول

ناگپور 14دسمبر (سیاست ڈاٹ کام )مہاراشٹر کی بی جے پی قیادت والی حکومت نے ایک بار پھر مسلمانوں کو پسماندگی کی بنیاد پر سابقہ کانگریس حکومت کی جانب سے دیئے گئے ریزرویشن کو نافذ کئے جانے پر ٹال مٹول کا رویہ اپنایا اور ریاست کے اقلیتی امور وزیر ونود تاوڑے نے آج یہاں ریاستی قانون ساز کونسل میں مسلم ریزرویشن کے تعلق سے پوچھے گئے سوالات کا گول مول انداز میں جواب دیا اور کہا کہ چونکہ یہ معاملہ ممبئی ہائی کورٹ کے روبرو زیر سماعت ہے لہذا حکومت جب تک عدالت کا فیصلہ نہیں ظاہر ہو جائے اس ضمن میں کوئی نتیجے پر نہیں پہنچ پائے گی ۔اقلیتی امور وزیر کے اس بیان پر ریاست کے سابق وزیر و سینئر کانگریس رکن اسمبلی محمد عارف نسیم خان نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی قیادت والی حکومت مسلمانوں کو ریزرویشن دینا ہی نہیں چاہتی اور نہ ہی وہ اس معاملے میں سنجیدہ ہے بلکہ فرقہ پرستی کی بنیاد پر وہ مسلمانوں کو ان کے آئینی حق سے محروم رکھ رہی ہے جبکہ سابقہ حکومت نے مسلمانوں کو پسماندگی ک بنیاد پر ریزرویشن دیا تھا جس طرح سے دیگر پسماندہ طبقات کو آئین کے مطابق یہ مراعات حاصل ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کانگریس حکومت نے مسلمانوں کو جو ریزرویشن دیا تھا اسے ایوان میں لا کر آئینی شکل دینا باقی تھی لیکن 2014 ء میں اقتدار میں تبدیلی کے بعد بھگوا سیاسی جماعتوں نے ریاست کی باگ دوڑ سنبھالی اور گزشتہ تین برسوں سے مسلسل وہ بذات خود و دیگر مسلم اراکین اسمبلی سمیت اپوزیشن کے متعدد ممبران نے مسلمانوں کو ریزرویشن دیئے جانے کی ایوان میں کی تھی لیکن افسوس کہ سب کا سب کا وکاس کا دعوی کرنے والے بی جے پی حکومت مسلمانوں کی فلاح و بہبودی نہیں چاہتی ہے اور ان کو ان کے آئینی حق سے محروم رکھنا چاہتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT