Wednesday , August 15 2018
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں دودھ میں ملاوٹ پر تین سال قید کی تجویز

مہاراشٹرا میں دودھ میں ملاوٹ پر تین سال قید کی تجویز

ممبئی۔ 13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت مہاراشٹرا نے دودھ میں ملاوٹ کو ایک ناقابل ضمانت جرم بنانے اور اس جرم کے ارتکاب پر تین سال کی جیل کی سزا مقرر کرنے کیلئے ایک قانون وضع کرسکتی ہے۔ ریاستی وزیر اغذیہ و سیول سپلائیز گریش باپٹ نے قانون ساز اسمبلی میں کہا کہ دودھ میں ملاوٹ کی سزا کو اگر تین سال قید تک بڑھا دیا جاتا ہے تو ملزم کیلئے ضمانت حاصل کرنے کی کوئی گنجائش باقی نہیں رہے گی۔ جے پی کے امیت ستم اور دیگر ارکان کی طرف سے ریاستی مقننہ کے ایوان زیریں میں اٹھائے گئے اس مسئلہ پر وہ اپنا جواب دے رہے تھے۔ باپٹ نے کہا کہ دودھ میں ملاوٹ فی الحال چھ ماہ کی قید کے ساتھ ایک قابل ضمانت جرم ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’اگر یہ سزا تین سال تک بڑھا دی جاتی ہے تو ملزم کو ضمانت ملنے کی کوئی گنجائش باقی نہیں رہے گی‘‘۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس ضمن میں بہت جلد قانون وضع کرے گی۔ ایوان میں کئی ارکان نے اس قسم کے جرائم کے لئے عمر قید مقرر کرنے کا مطالبہ کیا لیکن وزیر نے قانون وضع کرنے میں حائل دشواریوں کا تذکرہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT