Thursday , September 20 2018
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا میں مراٹھوں اور مسلمانوں کے تحفظات پر حکم التوا

مہاراشٹرا میں مراٹھوں اور مسلمانوں کے تحفظات پر حکم التوا

ممبئی /14 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی ہائی کورٹ نے مہاراشٹرا کی سابق کانگریس۔ این سی پی حکومت کے تحفظات فیصلہ پر حکم التوا جاری کیا اور کہا کہ مہاراشٹرا میں سرکاری ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں مسلمانوں اور مراٹھوں کو تحفظات نہیں دیئے جائیں گے، البتہ مسلمانوں کو تعلیمی اداروں میں تعلیم کے حصول کے لئے تحفظات برقرار رہیں گے۔ چیف جسٹ

ممبئی /14 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) ممبئی ہائی کورٹ نے مہاراشٹرا کی سابق کانگریس۔ این سی پی حکومت کے تحفظات فیصلہ پر حکم التوا جاری کیا اور کہا کہ مہاراشٹرا میں سرکاری ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں مسلمانوں اور مراٹھوں کو تحفظات نہیں دیئے جائیں گے، البتہ مسلمانوں کو تعلیمی اداروں میں تعلیم کے حصول کے لئے تحفظات برقرار رہیں گے۔ چیف جسٹس موہت شاہ کی صدارت میں بنچ نے تحفظات کے خلاف داخل کردہ کئی درخواستوں کو سماعت کے لئے قبول کرتے ہوئے کہا کہ تحفظات کے لئے سپریم کورٹ نے قانون وضع کیا ہے، جس میں مکمل نشستوں کے لئے 50 فیصد سے زیادہ تحفظات نہیں دیئے جاسکتے۔ سرکاری ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں پہلے ہی 52 فیصد نشستیں محفوظ رکھی گئی ہیں۔ سابق حکومت نے اس میں 73 فیصد تک کا اضافہ کیا تھا، یعنی مراٹھوں کے لئے 16 فیصد اور مسلمانوں کو 5 فیصد تحفظات دیئے گئے تھے۔ انتخابات سے قبل کئے گئے اس فیصلہ کو روک دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT