Wednesday , January 17 2018
Home / ہندوستان / مہاراشٹرا کے قریش برادری کی وزیراعظم مودی سے نمائندگی متوقع

مہاراشٹرا کے قریش برادری کی وزیراعظم مودی سے نمائندگی متوقع

ممبئی ۔ 24 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا میں بیف پر امتناع کے باعث تاجرین کو روزگار سے محرومی کا اندیشہ لاحق ہوگیا ہے اور انہوں نے اس مسئلہ پر وزیراعظم نریندر مودی سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست میں بیف کی تجارت پر امتناع کے خلاف تاجرین اور عوام نے پیر کو آزاد میدان میں ایک بڑی ریالی منظم کی اور پانچ رکنی وفد نے چیف منسٹر دیوین

ممبئی ۔ 24 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا میں بیف پر امتناع کے باعث تاجرین کو روزگار سے محرومی کا اندیشہ لاحق ہوگیا ہے اور انہوں نے اس مسئلہ پر وزیراعظم نریندر مودی سے رجوع ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست میں بیف کی تجارت پر امتناع کے خلاف تاجرین اور عوام نے پیر کو آزاد میدان میں ایک بڑی ریالی منظم کی اور پانچ رکنی وفد نے چیف منسٹر دیویندر فرنویس سے ملاقات بھی کی تھی۔ اس کے علاوہ تاجرین نے ریاستی وزیر اقلیتی امور ایکناتھ کھڈسے کو یادداشت پیش کرتے ہوئے امتناع پر نظرثانی کی خواہش کی۔ صدر آل انڈیا جمیعت القریش این یو قریشی نے کہا کہ قریش برادری کا اس کاروبار پر انحصار ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کھڈسے سے ملاقات کرتے ہوئے یہ واضح کیا کہ ہم گاؤ کشی پر امتناع کے خلاف نہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ نرگاؤ (بیل) پر امتناع عائد نہ کیا جائے کیونکہ یہ ہمارے روزگار سے جڑا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ضرورت پڑنے پر وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کریں گے کیونکہ لاکھوں افراد اور ان کے خاندان متاثر ہوں گے۔

TOPPOPULARRECENT