Thursday , November 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مہاراشٹرا کے مسلمانوں کو 5فیصد تحفظات کا مطالبہ

مہاراشٹرا کے مسلمانوں کو 5فیصد تحفظات کا مطالبہ

سابق اعلامیہ کو برقرار رکھنے کی خواہش ‘دیگلور میں زبردست احتجاجی جلوس اور ایس ڈی او کو یادداشت
دیگلور ۔ 20۔ اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) ریاست مہاراشٹرا میں سابقہ کانگریس و راشٹر وادی پارٹی کی مشترکہ حکومت نے مراٹھا سماج کے ساتھ ساتھ مسلمانوں کو بھی پانچ فیصد ریزرویشن کا اعلامیہ جاری کیا تھا ۔ تاہم مہاراشٹرا میں تختہ پلٹنے کے بعد بی جے پی کی حکومت نے اسے منسوخ کردیا ہے اب ساری ریاست میں اقلیتی طبقہ مسلمانوں کو 5 فیصدی ریزرویشن ( آرکشن ) کو لیکر ہر مقام پر احتجاج کیا جارہا ہے ۔ دیگلور میں بھی تمام مسلمانوں تاجرین نے اپنی اپنی دوکانیں ، کاروبار بند کر کے جمعیت العلماء ہند تعلقہ شاخ دیگلور کی جانب سے ایک خاموش احتجاج زبردست جلوس گنبدبیس محلے سے نکالا گیا جو شہر کی مختلف سڑکوں سے گشت کرتا ہوا ڈپٹی کلکٹر آفس پہنچا ، جہاں پر ایس ڈی او مسٹر کولی نے میمورنڈم قبول کرتے ہوئے  حکومت تک بات پہنچانے کا تیقن وفد کو دیا ۔ جمعیت العلماء اور تمام مسلمانوں کی جانب سے ایک میمورنڈم انگریزی میں صدر جمہوریہ ہند کے نام پر اور دوسرا مراٹھی میں ریاستی وزیراعلی کے نام داخل کیا گیا یہ ۔ جمعیت کے میمورنڈم کے مطابق حکومت پر یہ واضح کیا گیا ہیکہ اس ملک کی آزادی کی لڑائی میں ہم نے اور ہمارے مولویوں نے رہنماوں نے انگریز حکومت سے لوہا لیا تھا اور آزادی کے حصول کیلئے کافی خون بہایا گیا ہے اس لئے ہم بھی ملازمتوں میں ، تعلیم میں سہولیات پانے کے مکمل حقدار ہیں ۔ اس وقت برٹش گورنمنٹ سے مقابلہ کرنے کیلئے بابائے قوم مہاتما گاندھی ، پنڈت جوہر لال نہرو ، خان عبدالغفار خان ، مولانا ابوالکلام آزاد وغیرہ قومی رہنماؤں کے ساتھ مسلمانوں نے بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا اور آزادی حاصل کر کے ہی رہے ہیں ۔ اب یہ تعصب کیوں برتا جارہا ہے لہذا حکومت فوری متوجہ ہو کر ریزرویشن کا اعلامیہ حسب سابق جاری کرے ، اور تمام قائم شدہ کمیشنوں کی رپورٹ من و عن بروئے کار لانے کا مطالبہ بھی ان دونوں میمورنڈم درخواستوں کے ذریعہ حکومت سے کیا گیا ہے ۔ اس جلوس کی قیادت جمعیت کے تعلقہ صدر مفتی سید مختار الدین رفاعی ( کونسلر ) ، ایڈوکیٹ قاضی سید محسن علی ، ایڈوکیٹ قاضی پرویز ، ایڈوکیٹ قاضی تحسین علی ، شیخ محمد ( سابق رجسٹرار ) عبدالجلیل سیٹھ عمودی ، شاد دیشمکھ ، مفتی محمد احمد ، قاضی لائق علی نعمان ، محمد شریف ماموں ( کونسلر ) سید قاسم انجینئر ، پروفیسر محمد معز الدین چمکوڈے وغیرہ قائدین نے کی ۔

TOPPOPULARRECENT