Sunday , September 23 2018
Home / Top Stories / مہارشٹرا : بھگوا حکومت میں بھی اسلام بے حد مقبول

مہارشٹرا : بھگوا حکومت میں بھی اسلام بے حد مقبول

ممبئی۔حق معلومات کے تحت ایک سنسنی خیز تلاش میں پتہ چلا ہے کہ مہارشٹرا میں گذشتہ 43مہینوں سے 1878لوگوں نے اپنے مذہب تبدیل کئے ہیں ۔

سب سے زیادہ ہندوؤں نے مذہب بدلا ہے ۔1678لوگوں میں 1166مذہب بدل کر مسلمان‘ عیسائی ‘ اور بود ھ بننے والے ہندوتھے۔ 228مسلمان بھی ہند و ہوگئے ہیں۔

مہارشٹرا میں ایک رحجان سامنے آیا ہے کہ لوگ مذہب کے ساتھ ساتھ نام اور تاریخ پیدائش بھی بل رہے ہیں۔ یہ اعداد وشمار ایکٹیسٹ انل گلگالی نے آر ٹی ائی ایکٹ کے تحت حاصل کئے ہیں جن کے مطابق جن مسلمانوں نے مذہب بدلا ہے‘ ان میں 87فیصد نے ہندو مذہب اختیار کیا ہے ۔

جتنے لوگوں نے مذہب بدلا ہے ‘ ان میں69فیصد ہندو تھے‘ جن میں 57فیصد نے اسلام قبول کیا ہے ۔ مسٹر گلگالی کے مطابق مرکز اور ریاست میں زعفرانی حکومتیں ہونے کے باوجود مذہب بدلنے والوں کے لئے اسلام فیوریٹ مذہب ہے ۔

یہ اعداد وشمار 10جون 2014سے 16جنوری 2018تک کے ہیں۔ سرکاری ریکارڈ کے مطابق جو ڈی جی پی ایس میں دستیاب ہے ‘ مذہب بدلنے کے لئے 44فیصد نے اسلام کو اور صرف 21فیصد نے ہند ودھرم کو ترجیح دی ۔

TOPPOPULARRECENT