Tuesday , January 23 2018
Home / کھیل کی خبریں / مہنگے ترین کرکٹرس ٹیموں پر بوجھ بن گئے

مہنگے ترین کرکٹرس ٹیموں پر بوجھ بن گئے

ممبئی۔21 مئی (سیاست ڈاٹ کام ) انڈین پریمیئر لیگ کے نام ساتھ ہی بے پناہ پیسہ ذہن میں آجاتا ہے۔ ایونٹ میں ٹیموں نے کامیابی کے حصول کیلئے کئی بڑے کھلاڑیوں کو منہ مانگے داموں پر خریدا ہے لیکن ساتویں سیزن میں غیر متوقع طور پر نسبتاً غیر معروف پلیئرس ان کے مقابلے میں زیادہ بہتر کارکردگی دکھا رہے ہیں۔ کرس گیل،ویراٹ کوہلی، کیون پیٹرسن نے کاف

ممبئی۔21 مئی (سیاست ڈاٹ کام ) انڈین پریمیئر لیگ کے نام ساتھ ہی بے پناہ پیسہ ذہن میں آجاتا ہے۔ ایونٹ میں ٹیموں نے کامیابی کے حصول کیلئے کئی بڑے کھلاڑیوں کو منہ مانگے داموں پر خریدا ہے لیکن ساتویں سیزن میں غیر متوقع طور پر نسبتاً غیر معروف پلیئرس ان کے مقابلے میں زیادہ بہتر کارکردگی دکھا رہے ہیں۔ کرس گیل،ویراٹ کوہلی، کیون پیٹرسن نے کافی مایوس کیا ہے۔ سب سے بڑی مثال وکٹ کیپر دنیش کارتک کی ہے جو رواں برس کے مہنگے ترین کرکٹر ہیں۔ انہیں دہلی ڈیئر ڈیولز نے ساڑھے 12کروڑ روپے میں خریدا ہے لیکن وہ12مقابلوں میں 305 رنز ہی بناسکے ہیں۔ اسی ٹیم نے انگلش کھلاڑی کیون پیٹرسن کو 9 کروڑ روپے میں خریدا اور کپتانی بھی دی لیکن وہ9مقابلوں میں صرف 192رنز بناسکے ہیں۔ رائل چیلنجرز بنگلور کیلئے اس سال کرس گیل کے مظاہرے بھی مایوس کن ہے۔ ساڑھے 9 کروڑ روپے کے عوض ا

س سال کے لئے بنگلور میں برقرار رکھے گئے گیل نے زخموں کے باعث صرف 8میچز کھیلے اور محض 21 کی اوسط سے 190رنز بنائے۔ یاد رہے کہ انہوں نے گزشتہ سال پونے واریئرس کے خلاف محض 30 گیندوں پر گیارہ چھکوں اور 8 چوکوں کی مدد سے آئی پی ایل کی تاریخ کی تیز ترین سنچری اسکور کی تھی۔ ان کے ٹیم کے کپتان کوہلی بھی بالکل ناکام ثابت ہورہے ہیں، انہوں نے 12میچز میں 248 رنز بنائے ہیں۔ ساڑھے 12 کروڑ روپے دے کر انہیں ٹیم میں برقرار رکھنے کا رائل چیلنجرز بنگلور انتظامیہ کا فیصلہ اب خسارہ ثابت ہو رہا ہے۔ آسٹریلیا کے سابق ٹسٹ کرکٹر مائیکل ہسی کا آئی پی ایل کھیلنے اور انہیں پانچ کروڑ روپے میں حاصل کرنے ممبئی انڈینس کا فیصلہ بھی غلط ثابت ہورہا ہے۔ انہیں صرف پانچ میچز کھلائے گئے ہیں، جس میں انہوں نے ایک نصف سنچری کی مدد سے محض 86 رنز بنائے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT