Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / مہیشورم میں کے ٹی راماراؤ کی آمد سے قبل کسانوں کی گرفتاری

مہیشورم میں کے ٹی راماراؤ کی آمد سے قبل کسانوں کی گرفتاری

فیاپ سٹی کیلئے اراضیات حوالے کرنے والے کسان
وزیر سے معاوضہ کیلئے نمائندگی کرنا چاہتے تھے
حیدرآباد۔13مارچ(سیاست نیوز) مہیشورم میں ریاستی وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ کی پروگرام میں آمد سے قبل پولیس نے فیاب سٹی اسپیشل اکنامک زون کے لئے اپنی اراضیات حوالہ کرنے والے کسانو ںکو احتیاطی حراست میں لے لیا جبکہ کسان کے ٹی راماراؤ سے ملاقات کرتے ہوئے حکومت کی جانب سے کئے گئے وعدہ کے مطابق انہیں ان کی اراضیات کے معاوضہ کی نمائندگی کرنا چاہتے تھے۔ حراست میں لئے گئے کسانوں نے بتایاکہ وہ متحدہ ریاست آندھرا پردیش سے ہی اپنے حق کے حصول کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں ۔تشکیل تلنگانہ سے قبل ان سے وعدہ کیا گیا تھا ان سے حاصل کی گئی اراضیات کے معاوضہ کی اجرائی عمل میں لائی جائے گی لیکن اب تک بھی ان کی اراضیات کا معاوضہ جاری نہیں کیا گیا بلکہ اس سلسلہ میں کوئی پیشرفت نہیں ہوئی اور اب جبکہ وہ ریاستی وزیر سے ملاقات کرتے ہوئے اپنی یادداشت حوالہ کرنا چاہتے ہیںلیکن پولیس کی نے گرفتار کرتے ہوئے احتیاطی حراست کا نام دیاہے ۔ محکمہ پولیس کے عہدیداروں کے مطابق 20کسان جن کی اراضیات کے معاوضہ کا مسئلہ جاری ہے وہ ریاستی وزیر کے دورہ کے موقع پر احتجاج کرنے کی منصوبہ بندی کررہے تھے اسی لئے انہیں احتیاطی طور پر حراست میں لیا گیااورریاستی وزیر کی روانگی کے بعد انہیں چھوڑ دیا گیا۔ بتایا جاتاہے کہ حکومت نے فیاب سٹی خصوصی معاشی زون کے لئے ان کی اراضیات حاصل کی تھیں اور ان اراضیات کے معاوضہ کی اجرائی اب تک تعطل کا شکار بنی ہوئی ہے جس کے سبب کسان پریشان ہیں اوروہ مسٹر کے ٹی راما راؤ سے ملاقات کی متعدد مرتبہ کوشش کرچکے ہیں لیکن کامیابی نہیں ملی جس کے سبب وہ آج ان کے دورہ مہیشورم کے دوران ان سے ملاقات کے خواہش مند تھے لیکن پولیس نے انہیں وزیر کی آمد سے قبل حراست میں لے لیا اور ان کی واپسی کے بعد کسانوں کو رہا کیا گیا۔ حراست میں لئے گئے کسانوں کا کہناہے کہ آندھرائی حکمرانوں نے ان کے مطالبہ کوکم از کم سنا اور اس پر کاروائی کا تیقن دیا تھا لیکن تلنگانہ حکومت کے نمائندوں کی جانب سے ان کے مطالبہ کی سماعت کیلئے بھی وقت نہیں دیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT