Wednesday , June 20 2018
Home / شہر کی خبریں / میدک سے سنیتا لکشما ریڈی کانگریس اور پربھاکر ریڈی ٹی آر ایس امیدوار

میدک سے سنیتا لکشما ریڈی کانگریس اور پربھاکر ریڈی ٹی آر ایس امیدوار

حیدرآباد۔ 26 ۔ اگست (سیاست نیوز) حلقہ لوک سبھا میدک آئندہ ماہ ہونے والے ضمنی انتخابات کیلئے کانگریس نے سابق وزیر سنیتا لکشما ریڈی کو اپنا امیدوار بنایا ہے جبکہ تلنگانہ میں حکمراں جماعت ٹی آر ایس نے کے پربھاکر ریڈی کو اس حلقہ سے ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ میدک لوک سبھا کے ضمنی انتخاب کے لئے کئی کانگریس قائدین دعویدار تھے، ت

حیدرآباد۔ 26 ۔ اگست (سیاست نیوز) حلقہ لوک سبھا میدک آئندہ ماہ ہونے والے ضمنی انتخابات کیلئے کانگریس نے سابق وزیر سنیتا لکشما ریڈی کو اپنا امیدوار بنایا ہے جبکہ تلنگانہ میں حکمراں جماعت ٹی آر ایس نے کے پربھاکر ریڈی کو اس حلقہ سے ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ میدک لوک سبھا کے ضمنی انتخاب کے لئے کئی کانگریس قائدین دعویدار تھے، تاہم تین دن تک حیدرآباد میں قیام کرنے والے آل انڈیا کانگریس کے جنرل سکریٹری و انچارج تلنگانہ کانگریس امور ڈگ وجے سنگھ نے پارٹی کے تمام قائدین سے مشاورت کے بعد دہلی پہنچ کر ہائی کمان سے سنیتا لکشما ریڈی کے نام کی سفارش کی، جس کو ہائی کمان نے آج منظوری دے دی۔ چیف منسٹر تلنگانہ و صدر ٹی آر ایس کے چندر شیکھر راؤ نے حلقہ لوک سبھا میدک کے ضمنی انتخاب کیلئے کے پربھاکر ریڈی کو پارٹی امیدوار بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پارٹی کے سینئر قائدین اور وزراء سے مشاورت کے بعد کے پربھاکر ریڈی کے نام کو قطعیت دی گئی۔ اس حلقہ میں پرچہ نامزدگی کے ادخال کے کل آخری تاریخ ہے۔ چیف منسٹر نے امیدوار کو قطعیت دینے کے مسئلہ پر کل اور آج وزراء اور سینئر قائدین سے سرگرم مشاورت کی۔ کے پربھاکر ریڈی سونی ٹراویلس اور 1000کروڑ سے زائد کے اثاثہ جات کے مالک ہیں ۔ کے سی آر نے ٹی این جی اوز قائد پر ایک صنعت کار کو ترجیح دی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ چندر شیکھر راؤ نے تیقن دیا کہ دیوی پرساد کو قانون ساز کونسل کی رکنیت دیتے ہوئے تلنگانہ کیلئے ان کی خدمات سے استفادہ کیا جائے گا۔ چندر شیکھر راؤ نے علحدہ تلنگانہ تحریک میں ملازمین اور دیوی پرساد کی قیادت کی ستائش کی۔میدک لوک سبھا حلقہ کے تحت آنے والے تمام 7 اسمبلی حلقے ٹی آر ایس کے تحت ہیں۔ پارٹی نے ہر اسمبلی حلقہ کیلئے ایک وزیر کو انچارج مقرر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انتخابی مہم کی ذمہ داری وزراء ای راجندر، ہریش راؤ، ارکان قانون ساز کونسل کے پربھاکر اور راملو نائیک کو دی گئی۔ وزیر آبپاشی ہریش راؤ کو میدک لوک سبھا حلقہ کا انچارج مقرر کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT