Thursday , June 21 2018
Home / جرائم و حادثات / میرا بیٹا بے قصور ہے ، سیکوریٹی ایجنسیوں کی من گھڑت باتیں

میرا بیٹا بے قصور ہے ، سیکوریٹی ایجنسیوں کی من گھڑت باتیں

حیدرآباد ۔ 17 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : ’ میرا بیٹا بے قصور ہے اور داعش سے اس کا کوئی تعلق نہیں ، سیکوریٹی ایجنسیاں فرضی باتوں کو بنیاد بناکر من گھڑت الزامات عائد کررہی ہیں جب کہ میرے بیٹے نے کوئی غیر قانونی کام نہیں کیا ‘ ۔ یہ الفاظ سائبر آباد پولیس کی جانب سے گرفتار نوجوان سلمان محی الدین کے والد احمد محی الدین ریٹائرڈ انجینئر کے ہیں

حیدرآباد ۔ 17 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز ) : ’ میرا بیٹا بے قصور ہے اور داعش سے اس کا کوئی تعلق نہیں ، سیکوریٹی ایجنسیاں فرضی باتوں کو بنیاد بناکر من گھڑت الزامات عائد کررہی ہیں جب کہ میرے بیٹے نے کوئی غیر قانونی کام نہیں کیا ‘ ۔ یہ الفاظ سائبر آباد پولیس کی جانب سے گرفتار نوجوان سلمان محی الدین کے والد احمد محی الدین ریٹائرڈ انجینئر کے ہیں ۔ پولیس کا یہ موقف ہے کہ حیدرآباد کے ساکن سلمان محی الدین ترکی کے راستے شام جانے کا منصوبہ رکھتا تھا تاکہ داعش میں شامل ہوسکے ۔ احمد محی الدین نے کہا کہ ان کا بیٹا روزگار کے سلسلہ میں دبئی جارہا تھا کیوں کہ امریکہ کے لیے فیملی ویزا نہیں مل سکا تھا ۔ پولیس نے کہا کہ سلمان نے فرضی شناخت کے ذریعہ کئی فیس بک گروپس قائم کئے تھے اور وہ آئی ایس آئی ایس میں دلچسپی رکھنے والوں سے ربط قائم کئے ہوئے تھا ۔ اس پر سلمان کے والد نے کہا کہ کسی بھی کام کے بارے میں سوچنے اور عملی طور پر کرنے میں کافی فرق ہے ۔ ہوسکتا ہے کہ کمپیوٹر پر اس نے بعض تنظیموں کے بارے میں ہمدردی ظاہر کی ہو لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ عملی طور پر اس نے یہ کام کیا ہے ۔ جناب احمد محی الدین جو اپنے نوجوان لڑکے کی گرفتاری پر پریشانی کے عالم میں ہیں کہا کہ انہوں نے اپنے مسئلہ کو اللہ سے رجوع کردیا ہے اور اللہ پاک بہت جلد فیصلہ کرے گا اور ان کا لڑکا بے گناہ ثابت ہوگا ۔ انہوں نے پولیس کے رویہ پر تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے فرزند کے مستقبل کو تباہ کرنے کی کوشش جاری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آزمائش کی اس گھڑی میں وہ صبر کریں گے اور اپنی ساری تکلیف اور پریشانی کو اللہ سے رجوع کرچکے ہیں ۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کے بیٹے کی شادی اور محبوبہ کی بات کی جارہی ہے ۔ جب کہ سات سال قبل ہی اس کی شادی ہوچکی ہے اور بہو اور بچے انہیں کے ساتھ رہتے ہیں ۔ ان کی بہو حیدرآبادی لڑکی ہے جب کہ سیکوریٹی ایجنسیاں طرح طرح کی باتیں اور بے بنیاد الزامات عائد کررہی ہیں ۔ احمد محی الدین نے بتایا کہ ان کے لڑکے نے جے این ٹی یو سے اپنی انجینئرنگ کی تعلیم مکمل کی اور ایم ایس امریکہ کے شہر ہوسٹن سے کیا ۔ چار سال امریکہ میں رہنے کے بعد تین ماہ قبل وہ حیدرآباد آیا چونکہ امریکہ میں اسے فیملی ویزا کی سہولت نہیں ملی ۔ لہذا اس نے اپنی بیوی بچوں کے ساتھ زندگی بسر کرنے کو اہمیت دی ۔ اس کے ساتھی دوبئی میں رہتے ہیں لہذا انہوں نے اس تجارتی مرکز میں اپنے مستقبل کے آغاز کا مشورہ دیا ۔ وہ ویزٹ ویزا حاصل کرنے کے بعد دوبئی جانا چاہتا تھا کہ اسے ایرپورٹ پر گرفتار کرلیا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT