Wednesday , June 20 2018
Home / ہندوستان / میرٹھ عصمت ریزی: متاثرہ خاتون سے سیاستدانوں اورزرینہ عثمانی کی ملاقات

میرٹھ عصمت ریزی: متاثرہ خاتون سے سیاستدانوں اورزرینہ عثمانی کی ملاقات

میرٹھ۔/7اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایکٹریس و کانگریس لیڈر نغمہ نے آج بی جے پی پر الزام عائد کیا کہ وہ میرٹھ کے اجتماعی عصمت ریزی کے واقعہ کو فرقہ وارانہ رنگ دینے کی کوشش کررہی ہے۔ ہاسپٹل میں عصمت ریزی اور جبری تبدیلی مذہب کی شکار خاتون سے ملاقات کے بعد نغمہ نے اس واقعہ کو فرقہ وارانہ رنگ دینے بی جے پی کو مورد الزام ٹھہرایا۔ انہوں نے کہا کہ

میرٹھ۔/7اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) ایکٹریس و کانگریس لیڈر نغمہ نے آج بی جے پی پر الزام عائد کیا کہ وہ میرٹھ کے اجتماعی عصمت ریزی کے واقعہ کو فرقہ وارانہ رنگ دینے کی کوشش کررہی ہے۔ ہاسپٹل میں عصمت ریزی اور جبری تبدیلی مذہب کی شکار خاتون سے ملاقات کے بعد نغمہ نے اس واقعہ کو فرقہ وارانہ رنگ دینے بی جے پی کو مورد الزام ٹھہرایا۔ انہوں نے کہا کہ دو فرقوں میں فرقہ وارانہ جذبات بھڑکانے کی کسی بھی سیاسی پارٹی کو اجازت نہیں دی جاسکتی۔ مجرم کا کوئی مذہب نہیں ہوتامجرم کو صرف مجرم سمجھنا چاہیئے۔ ہندوجاگرن منچ کے ایک گروپ نے بھی یشودھا ہاسپٹل پہنچ کر متاثرہ خاتون کی عیادت کی۔ دوسری طرف یو پی اسٹیٹ کمیشن برائے خواتین کی صدر زرینہ عثمانی نے بھی شام کے اوقات میں ہاسپٹل پہنچ کر متاثرہ خاتون کی عیادت کی اور اس کے ارکان خاندان سے ہر ممکنہ امداد کا وعدہ کیا۔یاد رہے کہ ایک 20سالہ خاتون کا اغواء، اجتماعی عصمت ریزی اور جبری تبدیلی مذہب کا دلسوز واقعہ میرٹھ کے کارکھوڈا علاقہ میں رونما ہوا تھا جس کے بعد یہاں فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا ہوگئی تھی۔ زرینہ عثمانی نے کہا کہ وہ اپنی رپورٹ وزیر اعلیٰ اکھلیش یادو کو پیش کریں گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ متاثرہ خاتون اور اس کے ارکان خاندان اس واقعہ میں اب تک پولیس کی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔ دریں اثناء ایس ایس پی اونکار سنگھ نے کہا کہ کچھ شرپسند عناصر حالات کو بگاڑنے کی کوشش کررہے ہیں لیکن ان کی نشاندہی کرتے ہوئے جلد ہی انہیں گرفتار کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ حالات کشیدہ ہونے کی وجہ سے کارکھوڈا علاقہ میں پولیس کی زائد جمعیت تعینات کی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT