Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / میرٹھ میں مذہبی کتاب کی بے حرمتی

میرٹھ میں مذہبی کتاب کی بے حرمتی

صورتحال کشیدہ۔ 2نوجوانوں کی گرفتاری
میرٹھ۔/22ڈسمبر، ( سیاست ڈاٹ کام )موانا پولیس اسٹیشن علاقہ کے حدود میں سبھاش چوک پر ایک مقدس کتاب کو جلادینے کے واقعہ میں2افراد کوگرفتار کرلیا گیا۔ انچارج انسپکٹر سریندر بھٹی نے بتایا کہ یہ واقعہ کل اس وقت پیش آیا جب کلیان محلہ کے بعض مکینوں نے سبھاش چوک پر آگ جلائی تھی، اچانک طبائی محلہ کے 3نوجوان افروز (30سال ) رہبر زیدی ( 27سال ) اور ان کے ایک دوست نے آگ میں مقدس کتاب کو ڈال کر فرار ہوگئے جس کے ساتھ ہی برہم ہجوم  ملزمین کو پکڑ لیا اور انہیں زدوکوب کرنے لگا۔ اطلاع ملتے ہی پولیس نے وہاں پہنچ کر نوجوانوں کو بچالیا ۔ انہوں نے بتایا کہ پانچ نوجوانوں بشمول افروز اور رہبر کے خلاف ایف آئی آر درج کرلیا گیا ہے

اور اصل ملزمین کو جیل بھیج دیا گیا ہے اور مابقی ملزمین کی تلاش جاری ہے۔دریں اثناء رہبر کے بھائی ارشد نے ایک کیس درج کروایا ہے جس میں 10افراد کا نام اور 150افراد بے نام ہیں ان کے خلاف مکانات پر حملہ اور زدوکوب کا الزام عائد کیا گیا۔ پولیس انسپکٹر نے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ افروز منشیات کا عادی ہے اور چند ماہ قبل اسے مکان سے باہر کردیا گیا جس کے بعد سے وہ ایک مسجد میں پناہ لیا ہوا تھا ، پولیس اور سرکاری عہدیداروں کو حساس علاقوں میں متعین کردیا گیا ہے جو کہ صورتحال پر قریبی نظر رکھے ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT