Saturday , May 26 2018
Home / Top Stories / ’’میری ماں، کئی ہندوستانیوں سے بڑھ کر ہندوستانی ہیں‘‘ : راہول

’’میری ماں، کئی ہندوستانیوں سے بڑھ کر ہندوستانی ہیں‘‘ : راہول

یوپی اے چیرپرسن کے بیرونی نژاد تنازعہ پر وزیراعظم مودی کی تنقیدوں کا جذباتی ردعمل
بنگلورو ۔ 10 مئی (سیاست ڈاٹ کام) صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج جذبات سے مغلوب ہوکر کہا کہ ’’میری ماں کئی ہندوستانیوں سے بڑھ کر ہندوستانی ہیں‘‘۔ وہ وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے یو پی اے چیرپرسن سونیا گاندھی کے بیرونی نژاد کو نشانہ بنانے پر جذباتی ردعمل ظاہر کررہے تھے۔ صدر کانگریس نے یاد دلایا کہ پیدائشی طور پر اٹلی کی ہونے کے باوجود ان کی ماں نے اس ملک کیلئے قربانیاں دی ہیں۔ میری ماں اٹلی نژاد ہیں۔ انہوں نے ہندوستان میں اپنی زندگی کا سب سے بڑا حصہ گذارا ہے۔ اس لحاظ سے وہ کئی ہندوستانیوں سے زیادہ وہ سب سے بڑھ کر ہندوستانی ہیں۔ انہوں نے ملک کیلئے اپنی زندگی قربان کردی ہے۔ ملک کیلئے وہ کئی مصیبتیں برداشت کی ہیں۔ انہوں نے انتخابی ریاست کرناٹک میں اپنی طوفانی انتخابی مہم کو ختم کرنے سے قبل ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ میری ماں کے تعلق سے مودی کے تبصروں کا خیرمقدم کرتا ہوں۔ اگر وزیراعظم اس طرح کی باتیں کرکے خوش ہوتے ہیں تو انہیں خوش ہونے دیجئے۔ حقیقت تو یہ ہیکہ میری ماں دیگر ہندوستانیوں سے بڑھ کر ہندوستانی ہیں۔ سونیا گاندھی کے بیرونی نژاد کا مسئلہ یکم ؍ مئی کو ایک جلسہ عام کے دوران وزیراعظم مودی نے اٹھایا تھا جہاں انہوں نے کانگریس سربراہ کو للکارتے ہوئے کہا تھا کہ حکومت کرناٹک کے کارناموں کے تعلق سے 15 منٹ کیلئے تقریر کرکے دکھائیں چاہے وہ کسی بھی زبان میں ان کی ماں کی مادری زبان کے بشمول کسی بھی زبان میں اس حکومت کی کامیابیوں کا ذکر کرکے دکھایئں۔ قبل ازیں راہول گاندھی نے مودی سے کہا تھا کہ انہیں پارلیمنٹ میں مختلف مسائل پر بولنے کیلئے 15 منٹ کا موقع دیں تو وزیراعظم اس 15 منٹ تک ایوان میں بیٹھنے کے قابل نہیں ہوں گے۔ اسی دوران راہول گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی پر تنقید کی کہ انہوں نے (مودی) نے گذشتہ چار سال میں کوئی بھی پریس کانفرنس منعقد نہیں کی۔ گاندھی نے ٹوئیٹر پر بیان پوسٹ کرتے ہوئے کہا کہا میں نے بنگلورو میں علاقائی اور قومی میڈیا کے ساتھ بات چیت کرکے خوشی محسوس کی ہے لیکن وزیراعظم مودی نے اپنی حکومت میں 4 سال کے دوران کوئی بھی پریس کانفرنس نہیں کروائی۔ بنگلورو مجھے علاقائی اور قومی جماعت سے ملاقات کرکے خوشی ہوئی ہے۔ معاف کیجئے ایسے موقع ہر ایک کو نہیں ملتا کہ وہ وقت کی کمی کے باعث سوال کرسکے لیکن ہمارے وزیراعظم نے تو ان 4 برسوں میں کسی پریس کانفرنس سے خطاب نہیں کیا جبکہ میں نے ایسی کئی پریس کانفرنسیس کی ہیں۔ انہوں نے کرناٹک میں صحافیوں سے اپنی ملاقات اور بات چیت کی کئی تصاویر کو بھی ٹوئیٹر اکاؤنٹ پر لوڈ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT