Monday , December 11 2017
Home / ہندوستان / مین پوری میں دادری نوعیت کا واقعہ ٹل گیا نماز جمعہ کے بعد تشدد ، دکانات نذر آتش، پولیس بھی نشانہ

مین پوری میں دادری نوعیت کا واقعہ ٹل گیا نماز جمعہ کے بعد تشدد ، دکانات نذر آتش، پولیس بھی نشانہ

آگرہ ، 9 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش کے مین پوری میں آج نماز جمعہ کے بعد تشدد پھوٹ پڑا جبکہ ہجوم نے چند افراد کو گاؤذبیحہ کا مورد الزام ٹھہراتے ہوئے ان کا تعاقب کیا، انھیں مارا پیٹا اور عین ممکن تھا کہ دادری نوعیت کا واقعہ رونما ہوجاتا۔ فوری طور پر پی اے سی جتھہ کو طلب کرنا پڑا کیونکہ تشدد پر آمادہ ہجوم نے زائد از ایک درجن دکانات نذر آتش کردیئے۔ انھوں نے پولیس والوں اور اُن کی گاڑیوں کو بھی نشانہ بنایا۔ بعدازاں پیش آئی جھڑپوں میں کئی مقامی افراد بھی زخمی ہوئے۔ آتشزنی کرنے والوں کو منتشر کرنے آنسو گیس کا استعمال کیا گیا۔ یہ معاملہ صبح 8 بجے شروع ہوا جب چند افراد نے کہا کہ انھوں نے چار اشخاص کو گائے کا چمڑا نکالتے دیکھا۔ گھنٹہ بھر میں تقریباً 500 لوگ جمع ہوگئے اور اُن کی طرف بڑھنے لگے جو گائے کے ساتھ دیکھے گئے تھے۔ بعد میں پتہ چلا کہ یہ مردہ گائے تھی جس کا چمڑا وہ اُس کے مالک کی اجازت سے نکال رہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT