Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / میوہ فروشوں کو ہٹانے سڑک پر بلدیہ ہی کچرا پھینک رہی ہے

میوہ فروشوں کو ہٹانے سڑک پر بلدیہ ہی کچرا پھینک رہی ہے

رعیتو بازار مہدی پٹنم کے غریب میوہ فروش پریشان ، سی پی آئی اور تنظیم انصاف کا احتجاج
حیدرآباد ۔ 21 ۔ دسمبر : ( نمائندہ خصوصی) : ایک ایسے وقت جب کہ مرکزی و ریاستی حکومتیں سوچھ بھارت مہم کے تحت صاف صفائی پر خصوصی توجہ مرکوز کررہی ہے ۔ وزیر اعظم ، وزراء سے لے کر اعلیٰ سرکاری عہدیداروں کے ہاتھوں میں جھاڑو دکھائی دے رہی ہے ہمارے شہر میں کچرے کی نکاسی اور صاف صفائی کی بجائے پولیس کی مدد سے بلدیہ اہم مقام پر کچرا ڈالنے یا پھینکنے میں مصروف ہے یہ سب کچھ دراصل غریب میوہ فروشوں کو ان کے کاروبار سے محروم کرنے کے لیے کیا جارہا ہے ۔ قارئین رعیتو بازار مہدی پٹنم سے متصل بے شمار میوہ فروش جس میں ہندو مسلم سب شامل ہیں ۔ تقریبا 20 برسوں سے میوہ جات فروخت کرتے ہیں ۔ ٹھیلہ بنڈیوں پر کاروبار کرنے والے یہ لوگ کافی غریب ہیں اور ان کی کمائی سے ہی ان کے گھر بار چلتے ہیں لیکن پتہ چلا ہے کہ بلدی عہدیدار انہیں وہاں سے ہٹانے کے لیے وہاں کچرا پھینک رہے ہیں اس کے لیے کچرے سے لدی گاڑیاں وہاں لا کر الٹ دی جاتی ہیں ۔ اس سارے معاملہ میں بتایا جاتا ہے کہ پولیس کی مدد لی جارہی ہے ۔ بلدیہ اور پولیس کی ظلم و زیادتی کے خلاف تنظیم انصاف اور سی پی آئی کے قائدین نے آج مہدی پٹنم پہنچ کر میوہ فروشوں کے حق میں نعرے لگائے ۔ وہاں کاروبار کرنے والے غریب مرد و خواتین کا کہنا ہے کہ وہ برسوں سے یہاں کاروبار کررہے ہیں ۔ قریب ہی چار بس اسٹانڈس ہیں لیکن وہاں بس اسٹانڈ موجود رہنے کا بہانہ بناتے ہوئے غریب میوہ فروشوں کو ایک منصوبہ بند سازش کے تحت ہٹانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ صدر تنظیم انصاف گریٹر حیدرآباد سید کلیم الدین اور سی پی آئی قائد منیر پٹیل کی قیادت میں کمیونسٹ کارکنوں اور مقامی میوہ فروشوں کی ایک کثیر تعداد نے بلدی حکام اور پولیس ظلم کے خلاف احتجاج کیا ۔ بعض غریب میوہ فروش خواتین نے بتایا کہ وہ انتہائی غربت کی زندگی گذارتی ہیں ۔ میوہ فروخت کرتے ہوئے زندگی کی گاڑی کو آگے بڑھا رہی ہیں ۔ ایسے میں بلدی حکام اور پولیس ان سے ان کا روزگار چھیننے کی کوشش کررہے ہیں ۔ ان لوگوں کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ وہ کبھی بھی ٹریفک میں خلل کا سبب نہیں بنے بلکہ غلط ٹاون پلاننگ اور ناقص انتظامات و نا اہلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے بلدیہ اور پولیس والوں نے ٹریفک کا مسئلہ پیدا کیا ہے ۔ کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا اور تنظیم انصاف کے قائدین نے پولیس اور بلدی عہدیداروں کو انتباہ دیا کہ وہ ان کا روزگار چھیننے کی کسی بھی کوشش کو برداشت نہیں کریں گے بلکہ سکریٹریٹ تک ریالی نکالیں گے ۔ دھرنے منظم کریں گے کیوں کہ یہ غریب میوہ فروشوں اور ان کے خاندانوں کی بقاء کا سوال ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT