Monday , June 25 2018
Home / کھیل کی خبریں / میچ میں جیت کے جشن پر طالبان کا حملہ

میچ میں جیت کے جشن پر طالبان کا حملہ

پشاور۔16 مئی۔(سیاست ڈاٹ کام) جنوبی وزیرستان میں کرکٹ میچ میں فتح کا جشن منانے والے نوجوانوں کے ایک گروپ پر طالبان نے حملہ کردیا، جس کے نتیجے میں ایک نوجوان ہلاک اور پانچ زخمی ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق عسکریت پسندوں نے ان نوجوانوں کو ’حکم‘ دیا تھا کہ وہ ڈھول بجانا بند کردیں، جب انہوں نے اس حکم کو ماننے سے انکار کیا تو انہیں یہ سزاد دی گ

پشاور۔16 مئی۔(سیاست ڈاٹ کام) جنوبی وزیرستان میں کرکٹ میچ میں فتح کا جشن منانے والے نوجوانوں کے ایک گروپ پر طالبان نے حملہ کردیا، جس کے نتیجے میں ایک نوجوان ہلاک اور پانچ زخمی ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق عسکریت پسندوں نے ان نوجوانوں کو ’حکم‘ دیا تھا کہ وہ ڈھول بجانا بند کردیں، جب انہوں نے اس حکم کو ماننے سے انکار کیا تو انہیں یہ سزاد دی گئی۔عینی شاہدین نے ٹیلی فون پر بات کرتے ہوئے ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ وانا کے قریب کری کوٹے گاؤں میں ایک کرکٹ میچ جیتنے کے بعد کچھ نوجوان ڈھول بجارہے تھے، اسی دوران طالبان رہنما عین اللہ کے پیروکار وہاں پہنچے اور انہیں اس جشن کو بند کرنے کا حکم دیا۔جب لڑکوں نے ان کی اطاعت سے انکار کیا تو جھگڑا شروع ہوگیا، جس کے دوران عسکریت پسندوں نے کرکٹ شائقین پر فائرنگ شروع کردی۔ 16 برس کا لڑکا ہلاک اور پانچ دیگر نوجوان شدید زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو مقامی اسپتال منتقل کردیا گیا ۔عین اللہ کا تعلق طالبان کے اس گروپ سے ہے، جس کے سربراہ مولوی محمد نذیر تھے۔ جنوری 2013ء کے دوران مولوی نذیر ایک امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہوگئے تھے، حالانکہ انہوں نے حکومت کے ساتھ ایک امن معاہدے پر دستخط کررکھے تھے۔عسکریت پسندی سے تباہ حال جنوبی وزیرستان میں نوجوان اب بھی کرکٹ، والی بال اور فٹبال جیسے کھیلوں میں حصہ لیتے ہیں۔ مقامی باشندوں کا کہنا ہے کہ طالبان خود بھی لوگ موسیقی سے لطف اندوز ہوتے ہیں اور علاقے میں مختلف مواقعوں پر ڈھول بجاتے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ کشیدگی کی وجہ سے یہ حملہ کیا گیا، ہفتے کو قبائلی عمائدین نے ایک جرگے کے انعقاد کا فیصلہ کیا تھا۔ان کا کہنا ہے کہ قبائلی رضاکار اس حملے کا بدلہ لینے کی دھمکی دے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT