Wednesday , September 19 2018
Home / ہندوستان / میڈیا کا اتر پردیش سے جانبدارانہ سلوک

میڈیا کا اتر پردیش سے جانبدارانہ سلوک

لکھنو 3 جون (سیاست ڈاٹ کام )اتر پردیش کے ضلع بدایوں میں ہوئے اجتماعی عصمت ریزی اور قتل معاملہ کی ملک گیر پیمانے پر تشہیر ہوئی ہے وہی وزیر اعلی یو پی اکھیلیش یادو سے میڈیا پر الزام عائد کیا کہ وہ صرف یو پی میں رونما ہوئے جرائم کی تشہیر زیادہ کررہے ہیں جبکہ دیگر ریاستوں میں کئے جانے والے جرائم سے چشم پوشی کی جارہی ہے ۔ بدایوں واقعہ کے من

لکھنو 3 جون (سیاست ڈاٹ کام )اتر پردیش کے ضلع بدایوں میں ہوئے اجتماعی عصمت ریزی اور قتل معاملہ کی ملک گیر پیمانے پر تشہیر ہوئی ہے وہی وزیر اعلی یو پی اکھیلیش یادو سے میڈیا پر الزام عائد کیا کہ وہ صرف یو پی میں رونما ہوئے جرائم کی تشہیر زیادہ کررہے ہیں جبکہ دیگر ریاستوں میں کئے جانے والے جرائم سے چشم پوشی کی جارہی ہے ۔ بدایوں واقعہ کے منظر عام پر آنے کے بعد وزیر اعلی اکھیلیش یادو کو زبردست تنقیدوں کا سامنا ہے جس پر انہوں نے اپنا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہاتھ پر ہاتھ دھرے نہیں بیٹھی ہے بلکہ خاطیوں کے خلاف کارروائیاں بھی کی جارہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ صرف بدایوں ہی نہیں بلکہ ریاست کے کسی بھی علاقہ میں جرم کا ارتکاب کرنے والوں کے خلاف حکومت نے سخت سے سخت کارروائی کی ہے ۔ کابینی اجلاس کے بعد اخباری نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے اکھیلیش نے یہ بات کہی ۔ انہوں نے ایک بار پھر کہا کہ وہ یہ بات کئی بار کہہ چکے ہیں ریاست یو پی میں ہونے والے واقعات کی تشہیر دیگر ریاستوں کے مقابلے زیادہ کی جاتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک واقعہ بنگلور میں بھی رونما ہوا ۔ کیا اس کی میڈیا میں تشہیر کی گئی ؟ بالکل اسی طرح مدھیہ پردیش اور راجستھان میں بھی حالیہ دنوں کئی واقعات رونما ہوچکے ہیں لیکن ان کی تشہیر نہیں ہوئی ۔ انہو ںنے ریاست یو کے خلاف منفی تشہیر چلائے جانے کیلئے بی جے پی کو مورد الزام ٹہرایا اور کہا کہ بی جے پی ورکرس بہت چالاک ہیں ۔ وہ فوری دھرنے پر بیٹھ جاتے ہیں اور میڈیا کی توجہ اپنی جانب مبذول کروالیتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT