Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / میڈیکل اڈمیشن اسکام میں دو آئی اے ایس عہدیداروں کیخلاف سی بی آئی کیس

میڈیکل اڈمیشن اسکام میں دو آئی اے ایس عہدیداروں کیخلاف سی بی آئی کیس

نئی دہلی۔20 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سی بی آئی نے پوسٹ گریجویٹ میڈیکل کورسس کے داخلے میں مبینہ بے ضابطگیوں کے سلسلہ میں دو آئی اے ایس آفیسرس اور 11 حکومتی عہدیداران اور پرائیویٹ میڈیکل کالج ایڈمنسٹریٹرس کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔ آئی اے ایس آفیسرس پوڈوچیری کے ہیلتھ سکریٹری بی آر بابو اور سنٹرل ایڈمیشن کمیٹی چیرمین نریندر کمار ہیں۔ ان دونوں کے علاوہ سی بی آئی کیس میں نامزد دیگر سرکاری عہدیداران پوڈوچیری کے ہیلتھ اینڈ فیملی ویلفیر ڈائرکٹر رمن، سنٹرل اڈمیشن کمیٹی کنوینر وی گووند راج، جوائنٹ کنوینر کے پجانی راڈیا اور کوآرڈینیٹر جوناتھن ڈانیل ہیں۔ سیلف فینانس والے تین میڈیکل کالجوں اور چار ڈیمڈ میڈیکل یونیورسٹیوں کے عہدیداروں کو بھی ماخوذ کیا گیا ہے۔ سی بی آئی ایف آئی آر کے مطابق ملزم عہدیداروں نے باقاعدہ تعلیم حاصل کرنے والے اسٹوڈینٹس سے دھوکہ کیا جنہیں سنٹرلائزڈ اڈمیشن کمیٹی کی جانب سے کونسلنگ کے دوران عبوری اڈمیشن سرٹیفکیٹ جاری کردیا گیا لیکن بعد میں انہیں وہ سیٹیں دینے سے انکار کردیا گیا جو ان کے نام الاٹ کی گئی تھیں۔ سی بی آئی کا الزام ہے کہ عوامی خدمت گزاروں نے اپنے سرکاری منصب کا غلط استعمال کیا، مجرمانہ سازش میں پرائیویٹ ہاسپٹل کے عہدیداروں کے ساتھ ملوث ہوئے اور 2017 ء کے داخلہ عمل میں بونافائیڈ اسٹوڈنٹس کو دھوکہ دیا۔ ایف آئی آر میں بتایا گیا کہ اس سازش کی وجہ سے 96 اہل طلبہ داخلہ حاصل نہ کرسکے۔ کونسلنگ کے مختلف مرحلے ماہ مئی میں ہوئے تھے۔
ٹاملناڈو میں عددی طاقت کی آزمائش ابھی نہیں
چینائی۔20 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) مدراس ہائی کورٹ نے آج ٹاملناڈو اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش پر اپنے حکم التوا میں تا حکم ثانی توسیع کردی۔ جسٹس ایم دُرائے سوامی نے مختلف عرضیوں کی سماعت کرتے ہوئے یہ آرڈر جاری کیا۔ یہ عرضیاں دیناکرن کیمپ کے ایم ایل ایز کو نا اہل قرار دینے کے خلاف داخل کی گئی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT