Monday , December 18 2017
Home / اضلاع کی خبریں / میگاٹیکسٹائیل پارک کے قیام سے ریاست سنہرے تلنگانہ میں تبدیل

میگاٹیکسٹائیل پارک کے قیام سے ریاست سنہرے تلنگانہ میں تبدیل

ورنگل ۔ 22؍ اکٹوبر ( اے ایم نعیم) چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے رورل ضلع ورنگل کے گیس کنڈہ سنگم منڈل کے حدود میں ملک کا سب سے بڑا کاکتیہ میگا ٹکسٹائیل پارک 1150 کروڑ کی لاگت سے قائم کئے جانے والے پارک کا سنگ بنیاد رکھا ۔ ٹیکسٹائل پارک کے ساتھ ساتھ 669 کروڑ سے آوٹر رنگ روڈ 78 کروڑ کی لاگت سے تعمیر ہونے والے قاضی پیٹ آر او بی برج ‘ 25 کروڑ سے آئی ٹی پارک سیکنڈ فیس کا ایک ہی مقام پر سنگ بنیاد رکھا ۔ اس موقع پر منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ نے کہا کہ ورنگل میں نظام دور حکومت کو آعظم جاہی ملز کے بند ہونے کے بعد یہاں کے مزدور روزگار کے لئے بیرون ریاست کا رخ کرنے پر مجبور ہوگئے ۔ انہوں نے کہا کہ اعظم جاہی ملز کو بچانے کے لئے کانگریس حکومتوں سے کئی ایک مرتبہ نمائندگی کی گئی ۔ پی وی نرسمہاراؤ ملک کے وزیر اعظم تھے لیکن انہوں نے بھی اعظم جاہی ملز کو بچانے کے لئے کچھ نہیں کیا ۔ جبکہ ورنگل میں اعلی قسم کی کپاس کی پیدار ہوتی ہے ۔ انہوںنے کہا کہ اس ٹیکسٹائل پارک کے قائم ہونے سے ریاست سنہرے تلنگانہ میں تبدیل ہوگا ۔ یہاں پر کاٹن سے لیکر ریڈی میڈ گارمنٹ تیار ہوگا ۔ عالمی معیار کاکپڑا ہرقسم کے پارچہ جات ایک ہی مقام پر تیار کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ خوشی کی بات سنگ بنیاد کے دن ہی 3 ہزار 9 کروڑ کی سرمایہ کاری کا تیقن دیا گیا ہے ۔ مختلف کمپنیوں کی جانب سے چیف منسٹر کے سی آر نے کہا کہ ریاست میں صنعتیں قائم کرنے والوں کو حکومت کی جانب سے ہر ممکن سہولت فراہم کی جائیگی ان کی سہولت کے لئے آن لائن درخواست داخل کرنے کے 15 دنوں میں منظوری کے تمام مراحل مکمل کئے جائیں گے ایک روپیہ ‘ رشوت ‘ دینے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل میں قائم مامنور ایر پورٹ کو جلد ہی ترقی دی جائیگی ۔ اس موقع پر سی ایم نے حکومت کی جانب سے عوام کی فلا ح و بہبود کے لئے جاری کی جانے والی اسکیمات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کے عوام حکومت کی اسکیمات کلیانہ لکشمی ‘ شادی مبارک ‘ زچہ بچہ اور مالی امداد غریب مستحق نعشوں کی آخری رسومات کی ادائیگی حکومت کی جانب سے کی جا رہی ہے ۔ 5 ہزار سے زائد ریسڈنشیل اسکول کی تعمیر ‘ مشن کاکتیہ ریاست کی ترقی میں اہم کردار ادا کریں گے ۔ انہوں نے پرکال ایم ایل اے چلادھرما ریڈی کے مطالبہ ‘پرکال کو ریونیو ڈیویژن کا درجہ دیا جائے۔ چیف منسٹر نے مطالبہ کی تائید کرتے ہوئے کہاکہ عنقریب احکامات جاری کئے جائیں گے اور حلقہ کی ترقی کے لئے 50 کروڑ منظور کرنے کا اعلان کیا ۔ چیف منسٹر کے چندرا شیکھرراؤ نے مزید کہاکہ ورنگل کی عوام کو کالیشورم کا پانی سربراہ کیا جائیگا۔ ورنگل جو حیدرآباد کے بعد بڑے ضلع کا درجہ رکھتا ہے یہاں پر صنعت ‘ تجارت ‘ تعلیم اور دیگر شعبوں میں ترقی دی جائیگی ۔ صنعتوں کے قیام سے روزگار کے مواقع پیدا ہوتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پنچایت راج انتخابات وقت پر منعقد کے جائیں گے ۔ کے سی آر نے کہا کہ ورنگل کی عوام نے تحریک تلنگانہ میں اہم کردار ادا کیا ۔ اس موقع پر کے ٹی آر ریاستی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے کہاکہ آج ورنگل کی عوام کے لئے خوشی کا دن ہے جو ملک کے سب سے بڑا ٹیکسٹائل پارک کا قیام عمل میں لا یا جارہا ہے ۔ اس پارک کے قیام میں جن افراد کی اراضی لی گئی ہے سب متاثرہ خاندانوں میں سے ہر ایک فرد کو ٹریننگ دی جا کر روزگار دیا جائیگا ۔ اس موقع پر کڈیم سری ہری ڈپٹی سی ایم ‘اسپیکر مدھو سدھن چاری نے خطاب کیا ۔ دھرماریڈی کی صدارت میں منعقدہ جلسہ عام میں عوام کا کثیر اجتماع تھا ۔ کل کاروں نے ثقافتی پروگرام بیش کیا ۔ اسٹیج پر قائدین آپسی اختلافات کو فراموش کر کے ایک دوسرے کے بازو بیٹھے دیکھائی دیئے جبکہ ان کے تائیدی کارکن ایک دوسرے سے لڑتے ہوئے دیکھائی دیئے ۔ اسٹیج پر کے ٹی راماراؤ کے ساتھ دیا کرراؤ ارکان پارلیمنٹ داخل ہوئے پولیس کا معقول بندوبست دیکھا گیا ۔ کڈیم سری ہری تمام انتظامات کی نگرانی کر رہے تھے۔ جلسہ گاہ میں خواتین الگ الگ گروپ کی شکل میں بتکماں گیت گھا رہی ہیں ۔ چیف منسٹر کے آنے سے قبل پولیس کمشنر بی سدھیر بابو نے اسٹیج کا معائنہ کیا ۔ 12 مقامات پر پارکنگ کے انتظامات کئے گئے تھے ۔ چیف منسٹر ہیلی پیاڈ سے بس کے ذریعہ جلسہ گاہ پہنچے بعدازاں سنگ بنیاد رکھا اسٹیج پر آنے کے بعد عوام کو ہاتھ جوڑ کر نمستے کیا ۔ بسواراجو ساریا سابق وزیر سکریٹری ٹی آر ایس پارٹی نے سی ایم کو گلدستہ پیش کیا ۔

TOPPOPULARRECENT