Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / میں تلنگانہ کی ترقی کیلئے انتھک کوشش کررہا ہوں : کے سی آر

میں تلنگانہ کی ترقی کیلئے انتھک کوشش کررہا ہوں : کے سی آر

ریاست کو فی الفور 3500 کروڑ روپئے مالی امداد کی درخواست ، چیف منسٹرس کانفرنس طلب کرنے کی تجویز سے وزیراعظم کا اتفاق

حیدرآباد ۔ 19 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر تلنگانہ چندر شیکھر راؤ نے آج وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کی ۔ انہوں نے کہا کہ میں تلنگانہ کی ترقی کے لیے انتھک کوشش کررہا ہوں ۔ جب سے نئی ریاست تشکیل پائی ہے ترقی کے لیے کئی اقدامات کئے گئے ہیں ۔ بہتر کارکردگی اور موثر کام انجام دئیے جارہے ہیں ۔ تمام طبقات کو ساتھ لے کر چلنے کی کامیاب کوشش کی جارہی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب سے میں نے نئی ریاست کا اقتدار سنبھالا ہے تلنگانہ میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی پائی جاتی ہے ۔ کرنسی نوٹوں کی تبدیلی کے بارے میں انہوں نے کہا کہ اس سے نئی ریاست تلنگانہ کو مالی طور پر زبردست چیالنجس کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ ٹی آر ایس کے ذرائع نے بتایا کہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے ریاست کے حصول میں کامیاب ہونے کے بعد کئی ترقیاتی اسکیمات کا اعلان کیا تھا ۔ انہوں نے نئے اضلاع کی تشکیل کا کام تیزی سے شروع کیا اور سکریٹریٹ کی تعمیر کے لیے بھی اسکیم بنائی ۔ ان کے کئی اسکیمات پر کرنسی نوٹوں کی تبدیلی کے منفی اثرات مرتب ہونے کا امکان پیدا ہوگیا ہے ۔ ریاست کو لاحق مالی پریشانیوں سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے لیے چیف منسٹر نے وزیراعظم نریندر مودی سے نمائندگی کی ۔ ذرائع نے بتایا کہ ریاست کو فی الفور 3500 کروڑ کی ضرورت ہے ۔ جن کی مدد سے مختلف اسکیمات کو روبہ عمل لایا جاسکتا ہے ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے آج نئی دہلی میں وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کر کے کرنسی نوٹوں کی تبدیلی کے اعلان کی حمایت کرتے ہوئے ریاست کو ہونے والے نقصانات سے بھی واقف کروایا ۔ اگرچہ کہ مرکز کا یہ فیصلہ اہم اور اچھا قدم ہے مگر تلنگانہ ایک نئی ریاست کے طور پر وجود میں آئی ہے اس کے ساتھ اس کے حصہ میں کئی مالیاتی مسائل بھی آئے ہیں ۔ اپنے دورہ دہلی کے موقع پر چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ نے 500 ، 1000 روپئے کے کرنسی نوٹوں کی منسوخی کو رشوت اور کالے دھن کے خلاف وزیراعظم کے اعلان جنگ کو مثبت قرار دیا تاہم اس سے دیگر جو مسائل پیدا ہورہے ہیں ان کی یکسوئی کے لیے مرکز کی جانب سے امدادی اقدامات ضروری ہیں ۔ ریاست تلنگانہ میں نئے اضلاع کی تشکیل اور دیگر فلاحی اسکیمات کے لیے ٹی آر ایس حکومت کو مالیہ کی ضرورت ہے ۔ چیف منسٹر نے نوٹوں کی تنسیخ سے عوام کو ہونے والی دشواریوں سے بھی وزیراعظم کو واقف کروایا ۔ واضح رہے کہ ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ نے کل ہی نئی دہلی میں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ تھا کہ تلنگانہ کو جو نقصان ہوا ہے اس کی پابجائی کے لیے پارلیمنٹ میں اسپیشل فینانس اسسٹنٹ بل پیش کیا جائے گا ۔ ٹی آر ایس حکومت ملک میں معاشی اصلاحات کے لیے اٹھائے گئے قدم کا خیر مقدم کرتی ہے ۔ کرنسی نوٹوں کی منسوخی سے تمام ریاستوں اور عوام کو درپیش مسائل پر غور و خوص کرنے کے لیے چیف منسٹرس کی کانفرنس طلب کرنے چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ کی تجویز پر وزیراعظم نریندر مودی نے اتفاق کیا ۔ مرکزی حکومت کے سنسنی خیز قدم سے اٹھنے والے مسائل پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے یہ کانفرنس ضروری سمجھی جارہی ہے ۔ وزیراعظم سے ملاقات کے دوران چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کرنسی نوٹوں کی تبدیلی کے لیے وزیراعظم کے فیصلہ کا خیر مقدم کیا اور زور دیا کہ ریاست تلنگانہ کی جانب سے مرکز کو ٹیکسوں کی ادائیگی پر از خود پابندی عائد کردیں تاکہ کرنسی نوٹوں کی منسوخی سے ہونے والے مسائل کو دور کیا جاسکے ۔ انہوں نے ریاست کو نئے 500 روپئے کی نوٹوں کی سربراہی میں تاخیر پر وزیراعظم سے شکایت کی اور کہا کہ ریاست تلنگانہ کو 100 ، 50 اور 20 روپئے کے نوٹوں کو بھی فوری جاری کیا جانا ضروری ہے ۔ کے سی آر نے وزیراعظم سے ایک گھنٹہ طویل ملاقات کے دوران ریاستی بزنس پر پڑنے والے مالیاتی اثرات سے بھی واقف کروایا ۔ ان پر زور دیا کہ وہ خواتین کو ٹیکس استثنیٰ دیں ۔ جن خواتین کے اکاونٹس میں 2.5 لاکھ سے زائد رقم ہے انہیں ٹیکس استثنیٰ دیا جانا چاہئے ۔ خانگی دواخانوں میں پرانے نوٹس کی وصولی کو یقینی بنانے کی فوری ہدایت دینے کی بھی خواہش کی ۔ اے ٹی ایمس اور بنکوں کے سامنے عوام خاص کر ضعیف مرد و خواتین کی طویل قطاروں اور درپیش مسائل سے بھی مودی کو واقف کروایا ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT