Wednesday , September 19 2018
Home / Top Stories / میں تیسرے محاذ میں وزارت عظمی کا دعویدار ہوں : ملائم سنگھ

میں تیسرے محاذ میں وزارت عظمی کا دعویدار ہوں : ملائم سنگھ

کئی بی جے پی قائدین مودی کو وزارت عظمی سے روکنے کوشاں : سماجوادی سربراہ کا دعوی

کئی بی جے پی قائدین مودی کو وزارت عظمی سے روکنے کوشاں : سماجوادی سربراہ کا دعوی
ایٹاوہ ( اتر پردیش ) 17 اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) سماجوادی پارٹی کے سربراہ ملائم سنگھ یادو نے آج ادعا کیا کہ کئی بی جے پی قائدین نے ان سے رابطہ کیا ہے تاکہ نریندر مودی کو وزیر اعظم بننے سے روکا جائے ۔ ایٹاوہ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ملائم سنگھ یادو نے ادعا کیا کہ نریندر مودی کبھی بھی وزیر اعظم نہیں بن سکتے کیونکہ کئی اعلی بی جے پی قائدین ان کے حق میں نہیں ہیں۔ سماجوادی پارٹی سربراہ نے ادعا کیا کہ بی جے پی کے کئی قائدین نے ان سے رابطہ کیا ہے اور یہ کہا ہے کہ صرف وہی ( ملائم سنگھ ) ہیں جو مودی کو وزیر اعظم بننے سے روک سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان بی جے پی قائدین کو بھی وہ یہ تیقن دینا چاہتے ہیں کہ ہم نریندر مودی کو وزیر اعظم بننے سے روکیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو لوک سبھا انتخابات میں کوئی اکثریت حاصل نہیں ہوگی اور پارٹی کے حق میں بھی کوئی لہر نہیں ہے ۔ ملائم سنگھ یادو نے یہ ادعا کیا کہ 2002 کے گجرات فسادات کے بعد اس وقت کے وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی خود مودی کو چفے منسٹر کے عہدہ سے ہٹانا چاہتے تھے لیکن سینئر لیڈر ایل کے اڈوانی نے انہیں بچالیا ۔ مین پوری میں پی ٹی آئی سے بات چیت کرتے ہوئے ملائم سنگھ یادو نے کہا کہ تیسرا محاذ مرکز میں حکومت قائم کریگا ۔ سماجوادی پارٹی تیسرے محاذ کی سب سے بڑی پارٹی ہوگی اور وہ وزارت عظمی کے عہدہ کیلئے اپنا ادعا پیش کرینگے ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس تعلق سے قطعی فیصلہ محاذ کے تمام قائدین مل کر کرینگے ۔

انہوں نے کہا کہ ابتدائی مرحلہ میں ہم خیال جماعتوں کے قائدین نے مشاورت کی ہے اور طویل مشاورت کے بعد فیصلہ کیا گیا ہے کہ تیسرے محاذ کے لیڈر کا لوک سبھا انتخابات کے بعد فیصلہ کیا جائیگا ۔ ملائم سنگھ یادو نے کہا کہ بی جے پی کے وزارت عظمی امیدوار نریندر مودی سماجوادی پارٹی کیلئے کوئی خطرہ نہیں ہیں اور وہ صرف میڈیا کی پیداوار ہیں۔ قبل ازیں مین پوری میں ایک ریلی سے خطاب میں ملائم سنگھ یادو نے کہا تھا کہ اگر ان کی پارٹی کو اقتدار ملتا ہے تو غریب مسلمانوں کو پسماندہ طبقات کی طرح تحفظات فراہم کئے جائیں گے اور بنکروں کے قرضہ جات کو معاف کردیا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ ذات پات اور رنگ ونسل و مذہب کا امتیاز کئے بغیر مفت اعلی تعلیم کی فراہمی کو یقینی بنایا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس پارٹی ایک مردہ طاقت ہوچکی ہے اور وسیع تر کرپشن اور مہنگائی کی وجہ سے کانگریس پارٹی بہت پیچھے چلی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT