Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / میں نے ولاس راؤ دیشمکھ کی ہدایات کی تعمیل کی:بھوجبل

میں نے ولاس راؤ دیشمکھ کی ہدایات کی تعمیل کی:بھوجبل

سابق وزیر عدالت میں رو پڑے، جمعرات تک انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ تحویل میں
ممبئی ۔ 15 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مقامی عدالت نے آج سینئر این سی پی لیڈر اور مہاراشٹرا کے سابق پی ڈبلیو ڈی وزیر چھگن بھوجبل کو 17 مارچ تک انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ تحویل میں دیدیا۔ مہاراشٹرا سدن اسکام میں رقمی خرد برد مقدمہ میں انہیں کل گرفتار کیا گیا تھا ۔ عدالت نے آج اپنا موقف پیش کرتے ہوئے بھوجبل ایک مرحلہ پر رو پڑے اور کہا کہ وہ بے قصور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ سے انہوں نے تعاون کیا ہے ، وہ گزشتہ 50 سال سے سماجی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ جب انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے مجھ سے چند سوالات پوچھے اور دیانتداری کے ساتھ انہوں نے کہا کہ وہ نہیں جانتے ، اس کے باوجود انہیں گرفتار کیا گیا۔ بھوجبل نے کہا کہ مہاراشٹرا سدن گیسٹ ہاؤز دہلی کا کنٹراکٹ انہوں نے منظور نہیں کیا۔

انہوں نے صرف اس وقت کے چیف منسٹر آنجہانی ولاس راؤ دیشمکھ کی ہدایت پر پراجکٹس سے متعلقہ اجلاس میں شرکت کی تھی ۔ چیف منسٹر ولاس راؤ دیشمکھ نے ان سے کہا تھا کہ وہ میٹنگس میں شریک ہوں اور انہوں نے اس کا تعمیل کی ۔ انہوں نے کوئی کنٹراکٹ منظور نہیں کیا۔ انہوںنے دعویٰ کیا کہ ان کی جانب سے چلائے جارہے ممبئی ایجوکیشن ٹرسٹ کے چند ناراض ملازمین نے ان پر الزامات عائد کئے ہیں۔ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ نے ریمانڈ درخواست میں کہا کہ مہاراشٹرا سدن پراجکٹ کے کنٹراکٹر کے ایس چمنکار انٹرپرائیزس نے بھوجبل کی زیر کنٹرول فرم اوریجن انفراسٹرکچر کو 6.03 کروڑ روپئے ادا کئے۔ اس کے بعد چمنکار انٹرپرائیزس نے پرائم بلڈرس اینڈ ڈیولپرس کو سب کنٹراکٹ حوالہ کیا اور اس نے بھی 18.5 کروڑ روپئے فرضی رئیل اسٹیٹ معاملتوں کے سلسلہ میں ادا کئے ۔ ان تمام شواہد کی موجودگی میں یہ سمجھا جاسکتا ہے کہ بھوجبل رقمی خرد برد کے مرتکب ہوئے ہیں۔

گرفتاری غیر ضروری: کانگریس
مہاراشٹرا کانگریس نے این سی پی لیڈر چھگن بھوجبل کی گرفتاری پر مرکز کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ اس نے قرض ادا نہ کرنے والے تاجر وجئے مالیا کو ملک سے جانے کا موقع فراہم کیا ہے۔ اسمبلی میں قائد اپوزیشن وکھے پاٹل نے کہا کہ بھوجبل تحقیقات میں تعاون کر رہے تھے ، اس کے باوجود انہیں جیل بھیج کر سیاسی ڈرامہ رچا گیا۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور این سی پی ارکان اسمبلی کل اجلاس میں مستقبل کے لائحہ عمل کا فیصلہ کریں گے ۔

TOPPOPULARRECENT