Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں /  م 3  متواتر اچھے مانسون تلنگانہ کو بچاسکتے ہیں

 م 3  متواتر اچھے مانسون تلنگانہ کو بچاسکتے ہیں

حیدرآباد کے بشمول 5 اضلاع میں پانی کا سنگین بحران
حیدرآباد 10 اپریل (سیاست نیوز) تلنگانہ شدید خشک سالی کی لپیٹ میں ہے۔ زیادہ پریشان کن بات یہ ہے کہ نصف ریاست میں نصف آبی ذخائر خشک ہوچکے ہیں۔ اب مسلسل 3 مانسون زائد بارش کے ساتھ ہی تلنگانہ کو بدترین آبی بحران سے بچا سکتے ہیں۔ CSIR-NGRI کے چیف سائنٹسٹ شکیل احمد نے کہاکہ تلنگانہ کے دس اضلاع میں سے پانچ بشمول حیدرآباد میں پانی کا سنگین بحران ہے کیوں کہ بیشتر ذخائر آب خشک ہوچکے ہیں۔ اضلاع عادل آباد، کریم نگر، نلگنڈہ اور محبوب نگر میں بھی پانی کا شدید بحران ہے۔ کئی علاقوں میں گمبھیر صورتحال ہے۔ جوائنٹ ڈائرکٹر محکمہ گراؤنڈ واٹر کے دھنوجے نے کہاکہ متواتر تین اچھے مانسون زیادہ بارش کے ساتھ تلنگانہ کو سیراب کرسکتے ہیں۔ NRGI نے سنٹرل گراؤنڈ واٹر بورڈ، نیشنل ریموٹ سنسنگ سنٹر، تلنگانہ اور آندھراپردیش کے گراؤنڈ واٹر ڈپارٹمنٹس اور حیدرآباد میٹرو پولیٹن واٹر سپلائی اینڈ سیوریج بورڈ کے عہدیداروں کا اجلاس منعقد کیا جس میں پانی کی شدید قلت اور مسئلہ سے نمٹنے کے اقدامات پر غور کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT